رینجرز کے چھاپے ،ایم کیو ایم لندن کے 2 ملزمان گرفتار

رینجرز کے چھاپے ،ایم کیو ایم لندن کے 2 ملزمان گرفتار

  

کراچی(کرائم رپورٹر ) قانون نافذ کرنے والے اداروں نے شہر کے مختلف علاقوں میں کارروائی کرتے ہوئے متحدہ قومی موومنٹ(ایم کیو ایم)لندن کے 2 ملزمان کو گرفتار کرتے ہوئے غیر ملکی جدید اسلحے کا ذخیرہ بھی برآمد کرلیاہے۔رینجرزترجمان کے مطابق گلشن اقبال کے علاقے ڈسکو بیکری کے قریب رینجرز نے کارروائی کرتے ہوئے ایم کیوایم لندن سے تعلق رکھنے والے ٹارگٹ کلر فاروق کو گرفتارکرلیاہے۔ترجمان رینجرز کے مطابق ملزم2007 میں آگرہ تاج سیکٹرکی ٹارگٹ کلنگ ٹیم کا حصہ بنا، ملزم ایم کیوایم اور لیاری گینگ وارمیں تصادم میں ملوث رہا۔ترجمان کے مطابق ملزم نے2013 میں گینگ وارکارندے یوسف گھانچی کو قتل کیا، ملزم 2013 میں قتل کی 8 دیگروارداتوں میں بھی ملوث رہا۔2013 میں آپریشن شروع ہونے پرملزم فاروق روپوش ہوگیا۔ترجمان کے مطابق ملزم ایم کیو ایم مرکز نائن زیرو اورجمعہ گوٹھ میں بھی روپوش رہا۔ ملزم اسلحہ کی ترسیل کی وارداتوں میں بھی ملوث ہے اور اس کے قبضے سے غیر قانونی اسلحہ، ایمونیشن اور مسروقہ سامان برآمد ہوا۔ اسے قانونی چارہ جوئی کیلئے پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے۔دوسری کارروائی کراچی کے علاقے بہادر آباد میں کی گئی جہاں پولیس نے کڈنی ہل پارک میں چھاپہ مارکر غیر ملکی جدید اسلحہ کا مدفون ذخیرہ برآمد کرلیا۔ ایس ایس پی غلام اظفر مہیسر نے بتایا کہ بہادر آباد پولیس نے نسیم عرف بلڈر کو ٹیپوسلطان روڈ پر مقابلے کے بعد گرفتار کیا اور اس کی نشاندہی پر اسلحہ کی برآمدگی ہوئی جس میں میں لانگ رینج کی روسی اسنائپر رائفل، سائلنسر لگی ایک کلاشنکوف اور 4 پستول شامل ہیں۔ملزم نسیم ایم کیو ایم لندن کا سرگرم کارکن ہے اور این آر او کے ذریعے رہا ہوا تھا۔ اسے 2011 میں بھی قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اورنگی ٹان سے 5 کلاشنکوف سمیت گرفتار کیا تھا مگر پھر ایم کیو ایم اقتدار میں آئی تو این آر او کے ذریعے جرائم پیشہ افراد کے مقدمات ختم ہونے پر فوری رہائی ملی۔ ملزم نے 11 جون 1998 کو اورنگی ٹاؤن میں رحمت چوک پر ڈینٹسٹ ڈاکٹر مظاہر علی قریشی کو قتل کرنے کا بھی اعتراف کرلیا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -