چیف جسٹس کراچی آکر دیکھیں کہ تجاوزات کے پیچھے کون ہے: علی زیدی

چیف جسٹس کراچی آکر دیکھیں کہ تجاوزات کے پیچھے کون ہے: علی زیدی

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) وفاقی وزیر برائے سمندری امور سید علی حیدر زیدی نے کہا ہے کہ جس طرح سے تیزی فیصلے ہورہے ہیں اور کام ہور ہا ہے ایک سال بعد ملک موجودہ صورتحال سے نکل کر بہت آگے چلاجائے گا،تجاوزات کے حوالے سے زیادہ شور وہ لوگ کر رہے ہیں جو توڑ پھوڑ تجاوزات کے قیام کے حوالے سے ملوث ہیں،چیف جسٹس سپریم کورٹ سے میری اپیل ہے کہ وہ خود کراچی آکر جائزہ لیں اور پتہ لگائیں ان تجاوزات کے پیچھے کون تھا، یوٹرن صحیح مقصد اپنانے کے حوالے سے کہا گیا تھاہم پر یو ٹرن کا الزام لگانے والے قطری خط سے بھی مکر گئے، کراچی کے معاملات کو ٹھیک کرلینے اور تمام چیزوں کا جائزہ لینے کے کراچی پیکیج کا اعلان کیا جائے گا،کے پی ٹی میں کرپشن کے حوالے سے جو لوگ ملوث رہے ہیں ان کے ثبوت و شواید جمع کر رہا ہوں ان کے بارے میں پہلے سے بتادیا تو یہ بھاگ جائیں گے، جہاں تک بابر غوری کی بات ہے تو جس شخص نے زارا آپا کو قتل کیا تھا وہ کے پی ٹی کا ملا زم تھا اسے کس نے رکھا تھا یہ بات جلد سامنے لائی جائے گی،کراچی پورٹ کی زمینوں کی الاٹمنٹ کے حوالے سے آڈٹ کروارہا ہوں، ان خیالات کا اظہار انھوں نے اتوار کو دی فیڈریشن آف خوجہ شیعہ اثناعشری جماعت آف پاکستان کی جانب سے محفل مرتضی پی ای سی ایچ ایس سوسائیٹی میں چیف جسٹس آف پاکستان کے اعلان کردہ ڈیم فنڈ میں ورلڈ فیڈریشن اور پاکستان فیڈریشن کی طرف سے ایک کروڑ روپے دیئے جانے کی تقریب سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وفاقی وزیر علی حیدر زیدی نے کہا کہ جسطرح سے تیزی سے کام ہو رہا ہے فیصلے ہو رہے ہیں ایک سال بعد ملک اس صورتحال سے نکل کر بہت آگے جاچکا ہوگا، جہاں تک یو ٹرن کی بات ہے تواس کا مقصد صحیح مقصد اور حکمت عملی ہے جسے کہیں راستے میں آدمی ٹریفک میں پھنس جائے تو وہ راستہ بدل کر چلا جاتا ہے یوٹرن کے حوالے سے سب سے زیادہ تنقید وہ لوگ کر رہے ہیں جنھوں نے اس یو ٹرن کا غلط استعمال کیایہاں تک کہ قطری خط سے بھی مکر گئے، کہتے تھے الیکشن کا بائیکاٹ کریں گے اور پھر انھوں نے الیکشن لڑا ، انھوں نے کہا کہ تجاوزات کے عمل ایک منصوبہ بندی کے تحت کیا جارہا ہے پہلے تو یہ بات دیکھنا چاہئے کہ ان تجاوزات کے پیجھے کون تھاوہ ہی لوگ شور کر رہے ہیں جو تجاوزات اور توڑ پھوڑ میں ملوث ہیں ، میں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار سے اپیل کروں گا کہ وہ کراچی آکر خود تجاوزات کے حوالے سے جائزہ لیں اور معلوم کریں کہ ان تجاوزات کے پیچھے کون تھا،ایک سوال کے جواب میں علی زیدی نے کہا کہ جو لوگ کے پی ٹی میں کرپشن کے معاملات میں ملوث ہیں ان کے خلاف ثبوت و شواہد جمع کر رہا ہوں، اگر ان کے بارے میں میں نے پہلے سے بتا دیا تو وہ لوگ بھاگ جائیں گے ،جہاں تک بابر غوری کا تعلق ہے تو جس شخص نے زارا آپا کو قتل کیا تھا وہ کے پی ٹی کا ملازم تھااسے کس نے کہاں رکھا تھایہ جلد سامنے لائی جائے گی، کراچی پورٹ کے حوالے سے میں بریکنگ نیوز دے رہا ہوں کہ کرچی پورٹ کی زمینوں کی الاٹمنٹ کا آڈٹ کروایا جارہا ہے ، اور اس سلسلے میں لیٹر بھی لکھ دیئے گئے ہیں،کراچی پیکیج کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ کے پی ٹی کراچی کا گیٹ وے ہے پہلے کے پی ٹی کے حالات کو ٹھیک کیا جارہا ہے،کراچی کے تمام معاملات کو ٹھیک کرلینے اور تمام چیزوں کا جائزہ لینے کے بعد کراچی پیکیج کا اعلان کیا جائے گا۔وفاقی وزیر نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستان اور کراچی کی ترقی میں میمن اور خوجہ برادریوں کا بڑا کردار ہے،انھوں نے کہا کہ ڈیمز کی تعمیر پاکستان کو پانی کے بحران سے نکالنے کے لئے مثبت قدم ہے،بزنس کمیونٹی کے لوگوں کو چیلنجز کا پتہ ہے، بدقسمتی سے کرپشن ہماری ثقافت بن چکی ہے،ہم جو اقدامات کر رہے ہیں اس سے کرپشن کرنے والوں کو تکلیف پہنچ رہی ہے،انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے ہمارے باہر جانے پر پابندی لگائی ہوئی ہے۔تقریب کے دوران ورلڈ فیڈریشن اور پاکستان فیڈریشن کی جانب سے وفاقی وزیر کو ایک کروڑ روپے کا چیک پیش کیا گیا۔

مزید : کراچی صفحہ اول