کے ڈی اے نے قبضہ مافیا کے خلاف نئی حکمت عملی تیار کرلی

کے ڈی اے نے قبضہ مافیا کے خلاف نئی حکمت عملی تیار کرلی

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) ڈائریکٹر جنرل ادارہ ترقیات کراچی سمیع الدین صدیقی کی سربراہی میں قبضہ مافیا کے خلاف نئی حکمت عملی تیار کی گئی جس پر عملدرآمد کرتے ہوئے گلشن اقبال میں واقع رب میڈیکل سینٹر کے اطراف تجاوزات کا خاتمہ کیاگیا۔ مذکورہ کارروائی میں بھاری مشینری کا استعمال کرتے ہوئے درجن بھر سے زائد دکانیں مسمار کی گئیں جو حدود سے باہر تھیں۔ اس کے علاوہ تقریبا 300 چھجے، چبوترے، سائن بورڈز اور غیر قانونی چھوٹی بڑی دکانیں مسمار کی گئیں، جن میں اسٹالز اور کیبن کی تعداد زیادہ ہے۔ ہفتہ کی شب سے آپریشن کا آغاز رب میڈیکل سینٹر کے اطراف تجاوزات کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے کیا گیا جو اتوار تک جاری رہا اس دوران راشد منہاس روڈ گلشن اقبال بلاک 2میں انسداد تجاوزات عملے نے کارروائی کرتے ہوئے غیر قانونی پارک، ہوٹل اور متعدد غیر قانونی تعمیرات کو مسمار کیا۔ آپریشن کے موقع پر ڈائریکٹر جنرل ادارہ ترقیات کراچی سمیع الدین صدیقی موجود تھے جبکہ ڈائریکٹر محکمہ اسٹیٹ اینڈ انفورنسمنٹ ورئیل اندھر، ڈی ایس پی کے ڈی اے پولیس مظفر بلوچ، ترجمان ادارہ ترقیات اکرم ستار بھی ہمراہ تھے۔ گلشن اقبال میں کے ڈی اے اراضی پر عرصہ دراز سے قابضین موجود تھے، تنبیہہ کے باوجود سرکاری اراضی خالی نہیں کی گئی تھی جس کے باعث محکمہ اسٹیٹ اینڈ انفورنسمنٹ کے عملے نے عملی کارکردگی کا مظاہر کرتے ہوئے تجاوزات کا مکمل خاتمہ کردیا۔ ڈی جی کے ڈی اے نے عملے کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر سو فیصد کے ڈی اے اراضیاں قبضہ مافیا سے چھڑانے کے لئے کارروائیوں کا سلسلہ جاری رہے گا۔ اب تک واگزار کرائی گئی سرکاری زمینوں کو شہریوں کو صحتمندانہ اور تفریحی سہولیات فراہم کرنے کے لئے استعمال کیا جائے گا اس ضمن میں کام شروع کردیا گیا ہے اور شہر کراچی میں پارکس اور گرانڈز کا جال بچھانے کے لئے تجربہ کار اور باصلاحیت کے ڈی اے انجینئرز تیزی سے ہوم ورک کررہے ہیں۔ ہنگامی بنیادوں پر شہر کی تعمیر و ترقی اور شہریوں کو بنیادی سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے ادارہ اپنے تمام وسائل کا بخوبی استعمال کررہا ہے جس کے اثرات بہت جلد عیاں ہوں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر