”جو لوگ سوشل میڈیا پر گالیاں دیتے ہیں وہ ۔۔۔“ حامد میر نے ٹرولز کی ’لتریشن‘ کردی

”جو لوگ سوشل میڈیا پر گالیاں دیتے ہیں وہ ۔۔۔“ حامد میر نے ٹرولز کی ’لتریشن‘ ...
”جو لوگ سوشل میڈیا پر گالیاں دیتے ہیں وہ ۔۔۔“ حامد میر نے ٹرولز کی ’لتریشن‘ کردی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سوشل میڈیا بالخصوص ٹوئٹر پر لوگوں کو سب سے بڑی شکایت ٹرولنگ سے ہے۔ کوئی مشہور شخصیت اپنے مافی الضمیر کا اظہار کرتی ہے تو ساتھ ہی مخالفین گالم گلوچ شروع کردیتے ہیں۔ شکایت پر ٹوئٹر کی جانب سے ایکشن لینے کے باوجود یہ لوگ جعلی اکاﺅنٹس بنا کر دوبارہ آجاتے ہیں۔ ایسے ہی ٹرولز کی حامد میر نے اپنے ایک ٹویٹ میں تفصیل کے ساتھ ’ لتریشن ‘ کی ہیں۔

حامد میر نے اپنے ٹویٹ میں کہا جب کوئی ٹوئٹر پر سخت زبان استعمال کرتا ہے تو اس کی تین وجوہات ہوسکتی ہیں۔ انہوں نے پہلی وجہ دلیل کی کمی کو قرار دیااور کہا جب کوئی شخص ٹوئٹر پر سخت زبان استعمال کرتا ہے تو اس کا مطلب ہے کہ اس کے پاس بحث کرنے کو کچھ نہیں بچا۔

حامد میر نے ٹوئٹر پر گالیوں کی دوسری وجہ تربیت کی کمی کو قرار دیا اور کہا جو لوگ ٹوئٹر پر گالیاں دیتے ہیں اس سے یہی لگتا ہے کہ ان کے والدین نے ان کی اچھے طریقے سے تربیت نہیں کی۔

حامد میر نے کہا کہ جو شخص سخت زبان استعمال کرتا ہے ہوسکتا ہے کہ وہ نفسیاتی مریض ہو اس لیے اس کے خلاف ٹوئٹر کو شکایت اور اس پر ہونے والے ایکشن کے بعد اس کے والدین اور دوستوں کو چاہیے کہ اسے نفسیاتی امراض کے ماہر ڈاکٹر سے چیک کروائیں۔

حامد میر کی جانب سے یہ ٹویٹ ایک خاتون شازیہ عطا مری کے ٹویٹ کے جواب میں کیا گیا ہے۔ خاتون نے ایک ٹرول کے خلاف شکایت کی تھی جس پر ٹوئٹر نے ایکشن لیا تھا۔

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد