سٹاک مارکیٹ میں شدید مندی، 1354 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ 100 انڈیکس 40 ہزار کی نفسیاتی حد کھو بیٹھا

سٹاک مارکیٹ میں شدید مندی، 1354 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ 100 انڈیکس 40 ہزار کی ...
سٹاک مارکیٹ میں شدید مندی، 1354 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ 100 انڈیکس 40 ہزار کی نفسیاتی حد کھو بیٹھا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سٹاک ایکسچینج میں کاروباری ہفتے کا آغاز انتہائی مایوس کن رہا۔ پیر کے روز کاروبار شروع ہوتے ہی مارکیٹ شدید مندی کی لپیٹ میں آگئی جو مزید تنزلی کی طرف جاری ہے۔

سٹاک ایکسچینج میں آج (پیر کو) کاروبار کا صبح 9 بجے آغاز ہوا تو ایک گھنٹے بعد 10 بجے تک 700 سے زائد پوائنٹس کی کمی ہوگئی اور کے ایس ای 100 انڈیکس 40 ہزار کی نفسیاتی حد کھوبیٹھا۔ معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمت بڑھنے اور سیاسی ماحول میں قائم بے یقینی کی کیفیت کے باعث سرمایہ کار خوف کا شکار ہیںا ور اپنا سرمایہ نکال رہے ہیں۔ غیر ملکی سرمائے میں بھی بڑی کمی آرہی ہے ۔

واضح رہے کہ سٹاک مارکیٹ میں 5 دن ٹریڈنگ ہوتی ہے۔ گزشتہ ہفتے سٹاک مارکیٹ میں 75 کروڑ 99 لاکھ شیئرز کے سودے ہوئے جن کی مالیت 48 ارب 56 کروڑ روپے رہی جبکہ مارکیٹ کیپٹلائزیشن میں 28 ارب روپے کی کمی ہوئی اور یہ 8 ہزار 67 ارب روپے رہ گئی تھی جس میں حالیہ کمی کے بعد مزید کمی آئی ہے۔

دوسری جانب کاروباری ہفتے کے پہلے روز (آج پیر کو) سٹاک مارکیٹ کے 100 انڈیکس میں سہہ پہر تین بجے تک ایک ہزار 354 پوائنٹس کی کمی آگئی ہے۔ سٹاک مارکیٹ میں 3 اعشاریہ 34 فیصد منفی کاروبار ہوا ہے جس کے باعث انڈیکس 39 ہزار 141 پوائنٹس پر آگیا ہے۔

آج ہونے والی شدید مندی کے باعث سرمایہ کاروں کو اربوں روپے کے نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ حالیہ مندی کے باعث مارکیٹ کیپٹلائزیشن میں کمی واقع ہوئی ہے اور غیر ملکی سرمایہ کاری کی شرح بھی کم ہوئی ہے۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -بزنس -