اپوزیشن ترقی کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے بجائے حکومت کا ساتھ دے‘ فخر امام

      اپوزیشن ترقی کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے بجائے حکومت کا ساتھ دے‘ فخر امام

  



ملتان (سٹی رپورٹر)چیئرمین کشمیر کمیٹی پاکستان، ایم این اے و سابق سپیکر قومی اسمبلی سید فخر امام نے کہا ہے کہ علامہ اقبال نے جس آزاد مملکت کا خواب دیکھا تھا وہ شرمندہ تو ہو گیا مگر انتہائی افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ یہ وہ پاکستان نہیں جس کا ہمارے بزرگوں (بقیہ نمبر46صفحہ12پر)

نے خواب دیکھا تھا۔ آج ہر طرف سفارش،اقربا پروری کا دور دورہ ہے۔کرپشن ہے میرٹ کا قتل عام کیا جاتا ہے۔قومیں اس طرح کبھی ترقی نہیں کر سکتیں۔ اگر ترقی کی راہ پر گامزن ہونا ہے تو ہمیں میرٹ کو اپنانا ہو گا۔ محنت کرنا ہو گی۔اور یہی قائداعظم کا پیغام ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے بحیثیت مہمان خصوصی ینگ پاکستانیز آرگنائزیشن کے زیراہتمام شمع بناسپتی و کوکنگ آئل ملتان اور ویز واش ملتان کے تعاون سے غلامی سے نجات کے عالمی دن کے موقع پر اسپائر کالج ملتان میں میں منعقدہ خصوصی سیمینار بعنوان سلام پاکستان سے خطاب میں کیا جسکی صدارت ممتاز ماہر تعلیم و ادیب پروفیسر ڈاکٹر حمید رضا صدیقی نے کی جبکہ مہمانان اعزاز میں صدر ینگ پاکستانیز آرگنائزیشن نعیم اقبال نعیم، پرنسپل اسپائر کالج ملتان پروفیسر نعیم یاسین،وائس پرنسپل پروفیسر ریاست علی، سیاسی و سماجی رہنما محمد اشرف قریشی، زمان خان اعوان اور مارکیٹنگ ہیڈ شمع بناسپتی عمران اعظمی شامل تھے۔چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام نے سلام پاکستان سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آذادی دنیا کی سب سے بڑی نعمت ہے پاکستان نے 14 اگست 1947 میں آذادی حاصل کی مگر بدقسمتی سے ہم نے ملک کا آدھا حصہ 1971 میں کھو دیا۔ہمیں یہ دیکھنا ہے کہ اپنے قیام کے بعد پاکستان نے کتنی ترقی کی۔چائنہ اور دیگر ممالک ہمارے بعد آزاد ہوئے مگر آج اقتصادی اور معاشی طور پر وہ ہم سے آگے ہیں۔ جبکہ بد قسمتی سے ہمارا شمار ابھی تک ترقی پذیر ممالک میں ہوتا ہے۔ اقتصادی حالات کسی بھی ملک کے پیرا میٹرز ہوتے ہیں جس سے دنیا کو پتہ چلتا ہے کہ اس ملک نے کتنی ترقی کی۔ سید فخر امام نے مزید کہا کہ تعلیم کو معاشرے میں بنیادی اہمیت حاصل ہے۔تعلیم کے بغیر ترقی کا تصور نا ممکن ہے۔نوجوان ہماری آبادی کا 64 فیصد حصہ ہیں۔ان نوجوانوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کر کے ترقی کی بنیاد رکھی جا سکتی ہے۔آج ضرورت اس امر کی ہے کہ نوجوان سامنے آئیں اور ملکی ترقی میں اپنا حصہ ملائیں۔ سید فخر امام کا کہنا تھا کہ طالب علموں پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔انہیں ملکی ترقی میں اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔آج ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم اپنے ملک میں تعلیم کو فروغ دیں۔دنیا کی 1000 بہترین یونیورسٹیز میں ہم آخری نمبروں پر ہیں۔ہمیں اپنا معیار تعلیم بھی بلند کرنا ہو گا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر حمید رضا صدیقی نے کہا کہ اگر ہم چاہتے ہیں کہ پاکستان خود مختار اور خوشحال ہو تو ہمیں محنت کی راہ کو اپنانا ہو گا تب کہیں جا کر اقوام عالم میں پاکستان کا نام روشن ہو گا۔ نعیم اقبال نعیم پروفیسر نعیم یاسین، اشرف قریشی اور عمران اعظمی نے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قومیں محنت کے بل بوتے پر ترقی کرتی ہیں۔کشکول پھیلانے سے کبھی کوء دولت مند نہیں ہوا۔بدقسمتی سے کشکول پھیلانا ہماری عادت بن چکی ہے۔ہمیں محنت کی عادت کو اپنانا ہو گا۔اس کے بغیر ترقی ناممکن ہے۔ سیمینار سے پروفیسر ریاست علی، زمان خان اعوان، محمد سہیل، سیرت راجپوت، حافظ عبدالرحمان، علی رضا مرزا،معاذ الرحمان اور محمد اصغر نے بھی خطاب کیا دریں اثنا? چیئرمین کشمیر کمیٹی پاکستان سید فخر امام نے میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مودی اور اسکی حکومت نے غیر قانونی فیصلہ کیا بھارت جو ملٹری مظالم کر رہی تھی اس میں اور اضافہ کر دیا گیا کشمیر میں 120 دن سے کسی کو نہیں جانے دے رہے.ملتان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سید فخر امام کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں خواتین کی عصمت دری کو جنگی ہتئیار کے طور پر استعمال کیا جارہا ہے 13 ہزار نوجون کشمیریوں کو زبردستی اُٹھا کر لے گئے ہیں اس موقع پر پروفیسر حمید رضا صدیقی، نعیم اقبال نعیم، پروفیسر نعیم یاسین، محمد سہیل، پروفیسر ریاست علی و دیگر بھی موجود تھے۔

سیمینار

جودھ پور،نواں شہر(نمائندہ پاکستان) ماہر تعلیم ملک محمد اقبال حسین تھہیم کے فرزند ملک محمد کاشف کے کے دعوت ولیمہ میں چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام شاہ اور دیگر اہم شخصیات نے خصوصی شرکت کی۔تفصیل کے مطابق گذشتہ روز ماہر (بقیہ نمبر47صفحہ12پر)

تعلیم ملک محمد اقبال حسین تھہیم کے فرزند ملک محمد کاشف تھہیم رشتہ ازدواج میں منسلک ہوگئے دعوت ولیمہ کی تقریب میں چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام شاہ نے شرکت کی اور دلہا کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا اس موقع پر حاجی غلام حسین،ملک آصف،غلام عباس کھوکھر،ندیم شاہین،ملک یاسر تھہیم،انصر عباس تھہیم،امن خان اور دیگر شخصیات نے بھر پور شرکت کی۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام شاہ نے کہا کہ موجود ہ حکومت وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں درست سمت میں کام کررہی ہے آہستہ آہستہ ملک بحرانوں سے نکل جائے گا اپوزیشن ترقی کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کی بجائے حکومت کا ساتھ دے،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کشمیر میں بھارتی درندگی کسی صورت قبول نہیں ہم اپنے کشمیری بھائیوں کے دکھ درد میں برابر کے شریک ہیں اقوام متحدہ سمیت تمام عالمی اداروں میں کشمیر کا مقدمہ لڑرہے ہیں اور کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے اس کو پاکستان سے کسی صورت جد ا نہیں ہونے دیں گے کشمیر کے متعلق بھارت کے تمام عزائم خاک ہوجائیں گے۔

فخر امام

مزید : ملتان صفحہ آخر