مظفر گڑھ‘ بجلی لوڈشیڈنگ میں اضافہ‘ کاروبار ٹھپ‘ تاجروں کو بھاری نقصان

مظفر گڑھ‘ بجلی لوڈشیڈنگ میں اضافہ‘ کاروبار ٹھپ‘ تاجروں کو بھاری نقصان

  



مظفرگڑھ بیورو رپورٹ تحصیل رپورٹر ) شہر بھر میں روزانہ بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ معمول بن گئی، تفصیلات کیمطابق شہر اور گردونواح میں بجلی چوری کی وارداتوں میں اضافہ ہوا تو میپکو حکام نے بجلی چوری کی بڑی وارداتوں پر قابو پانے کی بجائے لائن لاسز پر قابو پانے کے لیے(بقیہ نمبر53صفحہ7پر)

غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور اوورچارجنگ کے غیرقانونی طریقے اپنا لیے،ذرائع کیمطابق میپکومظفرگڑھ کے حالیہ ایس ای اور ایکسیئن کی تعیناتی کے بعد سے بھاری لائن لاسز پر قابو پانے کے لیے مہینے آخری ایام میں غیرقانونی طور پر طویل غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے،جس کے تحت صبح ساڑھے 8 بجے سے شہریوں کو بجلی کی فراہمی بند کردی جاتی ہے اور دوپہر 2 بجے بجلی بحال کی جاتی ہے،ادھر بجلی چوری کی بڑھتی وارداتوں پر قابو پانے کی بجائے بھاری بھرکم بل ادا کرنے والے صارفین سے مختلف حیلے بہانوں سے اوورچارجنگ کی شکایات بھی معمول بن چکی ہیں.شہریوں کا کہنا ہے کہ میپکو حکام اپنی نااہلیوں پر قابو پانے کی بجائے عام صارفین پر دباؤ میں اضافہ کررہے ہیں،دوسری جانب مسلسل غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور اوورچارجنگ کے باعث چھوٹے کاروباری افراد کا کاروبار بھی ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے اور فوٹو اسٹیٹ،فوٹوگرافی،کپڑے،ٹیلرنگ کا کاروبار کرنے والے سمیت مختلف چھوٹے کاروباری افراد کو بھاری بھرکم نقصان برداشت کرنا پڑرہا ہے.

نقصان

مزید : ملتان صفحہ آخر