پی ٹی آئی ارکان قومی اسمبلی کا اپنے وزراء کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار

  پی ٹی آئی ارکان قومی اسمبلی کا اپنے وزراء کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا ...

  



 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے 2 ارکان قومی اسمبلی نے اپنی حکومت کے وزراء کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کردیا۔جیو نیوز کے پروگرام کیپیٹل ٹاک میں اسلام آباد سے منتخب رکن قومی اسمبلی راجہ خرم شہزاد نے کہا کہ وفاقی دارالحکومت کے اداروں میں کرپشن بڑھ گئی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ایوان میں لوگوں کے مسائل کی بات ہو تو اس سے بہتر کیا بات ہوسکتی ہے، ہم نے وزیراعظم عمران خان سے کہا ہے کہ ہمیں عوام کی سہولت کے لیے قانون سازی کرنی چاہیے۔پی ٹی آئی ایم این اے کا کہنا ہے کہ بدقسمتی سے پاکستان میں رشوت لوگ حق سمجھ کرلیتے ہیں، نیب بڑے بڑے مگرمچھوں کو پکڑتا ہے لیکن چھوٹی مچھلیوں پر ہاتھ نہیں ڈالتا۔انہوں نے مزید کہا کہ ضلعی حکومتوں کو اپنی گورننس اچھی کرنی چاہیے، چیک اینڈ بیلنس حکومت کا کام ہے، ہم عوام کے مفاد کے لیے ہمیشہ آواز اٹھائیں گے۔تحریک انصاف کے کراچی سے منتخب رکن قومی اسمبلی عطاء اللہ خان کا کہنا تھا کہ مجھے نہیں پتا کہ ہمارے وزراء کابینہ میں کیا کرتے ہیں لیکن وہ کم ازکم کراچی کی نمائندگی نہیں کرتے۔عطاء  اللہ نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ سچ بولا ہے اور سچ کا ساتھ دیاہے لیکن بدقسمتی سے کراچی میں انصاف ہوتا نظر نہیں آرہا۔ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں 7 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ ہوتی ہے اور باقی مینٹیننس کے نام پر بجلی غائب رہتی ہے، شہر میں 12 سے 16 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ ہوتی ہے۔پی ٹی آئی رہنما نے مزید کہا کہ سمجھ نہیں آتی کہ بیورو کریسی کیوں لوگوں کو ریلیف نہیں دینا چاہتی، پارلیمانی اجلاس میں تمام مسائل سے وزیراعظم کو  آگاہ کرتے ہیں۔پی ٹی آئی کے پشاور سے منتخب رکن قومی اسمبلی نور عالم خان نے کہا کہ کچھ اراکین کو وفاقی کی طرف سے فنڈز ملے ہیں، میرے حلقے میں پرویز خٹک کے دور میں شروع کیے گئے پروگرام اب ختم کردیے گئے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ پارٹی میں رہتے ہوئے عوام کے لیے آواز اٹھانا میرا جمہوری حق ہے، پارٹی لیڈرز کو دل بڑا کرنا پڑے گا اور تنقید برداشت کرنی ہوگی، پارٹی لیڈرز کو تنقید برائے اصلاح برادشت کرنی ہوگی۔انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں جمہوری سوچ رکھنے والے لوگ کم ہوگئے ہیں، بدقسمتی سے ملوث عناصر کو عدالتوں سے رعایت مل جاتی ہے۔

پی ٹی آئی

مزید : صفحہ آخر