ٹی پی ایل لاجسٹکس کی پہلی آن لائن لائیو آرڈر ٹریکنگ متعارف 

ٹی پی ایل لاجسٹکس کی پہلی آن لائن لائیو آرڈر ٹریکنگ متعارف 

  



لاہور(پ ر) ٹی پی ایل لاجسٹکس سپلائی چین میں چیلنجزکو کم کرنے کے لئے ٹیکنالوجی متعارف کرا رہا ہے۔ مئی میں TPL Logisticsنے Rider کا آغاز کیا جوE-commerce اور آن لائن سیلرز کیلئے ایک ڈیلیوری سروس ہے۔ تکمیل، ڈلیوری اور آپریشنز سافٹ ویئر پر مشتمل پروپرائٹری ڈیجیٹل لاجسٹکس انجن سے لیس Rider نے ثابت کیا ہے کہ وہ پاکستان کے سب سے بڑے آن لائن اسٹورز اور مارکیٹ پلیس کا پسندیدہ پارٹنر ہے۔ یہ ٹیکنالوجی تیز ترین اور زیادہ درست ڈیلیوری کی سہولت فراہم کرتی ہے جو COD سے متعلق متعدد چیلنجوں کا بہترین حل فراہم کرتی ہے۔ TPL Maps، Trakker اور مضبوط تکنیکی جدت سے فائدہ اٹھاتے ہوئے Rider نے پاکستان میں اپنی نوعیت کے سب سے پہلے Live آرڈر ٹریکنگ کا آغاز کیا۔ Uber اور Careem جیسی ”now“ کامرس اور آن ڈیمانڈ سروس نے صارفین کے طرز زندگی میں Live ٹریکنگ کو آسان بنایا، اس کا دائرہ کار Pick Up اور Drop Off کے سنگل پوائنٹ تک محدود ہے۔ یہ حل E-commerce اور Last Mile کے لئے موزوں نہیں ہے جہاں متعدد مقامات سے آرڈر لینے، جمع کرنے اور ترتیب دینے کے بعد انہیں مختلف انفرادی پتہ جات پر پہنچانے کی ضرورت ہوتی ہے۔ 

ایک اندازے کے مطابق پاکستان میں 10 میں سے 4 پیکیج اپنی منزل مقصود تک نہیں پہنچ پاتے۔ اس طرح کی ناکام ترسیل کے باعث ای کامرس ریٹیلرز کے ساتھ ساتھ ڈیلیوری کمپنیوں کو بھی زیادہ لاگت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ناکام ترسیل کی عام وجہ یہ ہے کہ صارفین کو ڈیلیوری کے وقت کے بارے میں آگاہی نہیں ہوتی جس کے باعث وہ گھر پر یا پیکیج وصول کرنے اور ادائیگی کے لئے دستیاب نہیں ہوتے۔ 

Rider کے سی ای او سلمان الانہ نے کہا کہ ہم ایک ایسی ڈیلیوری سروس تشکیل دے رہے ہیں جس میں صارفین شروع سے لے کر آخر تک باخبر ہوں۔ آن لائن خریداری کا تجربہ فزیکل اسٹور میں جا کر خریداری سے بہتر نہ ہو تو کم ازکم اس کے برابر ہونا چاہئے۔ اس کا مطلب ہے کہ شفافیت، رفتار اور سب سے زیادہ اہم بات تصدیق یا ہدایات کے لئے مایوس کن کال نہ ہو۔ 

Rider ملٹی پوائنٹ پک اپ اور ڈراپ آف ماڈل کے اندر صارفین کے لئے Live ٹریکنگ کے پیچیدہ مسئلہ کو حل کرتا ہے، پیکیج کے بارے میں بے چینی کو کم کرنے کے علاوہ صارفین کو اس بارے میں آگاہ رکھتا ہے کہ ان کا آرڈر کہاں ہے اور یہ کب تک ان کی دہلیز پر پہنچے گا۔ 

مزید : کامرس