ڈاکٹرز کی عدم گرفتاری پر ماتحت عدالتوں کی تالہ بندی، وکلاء آج آئی جی آفس کا گھیراؤ کرینگے 

ڈاکٹرز کی عدم گرفتاری پر ماتحت عدالتوں کی تالہ بندی، وکلاء آج آئی جی آفس کا ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی/نامہ نگار)پی آئی سی کے ڈاکٹرزسے تنازع کے معاملہ پر وکلاء نے لاہور کی تمام ماتحت عدالتوں کی تالہ بندی کردی،لاہور کی طرح پنجاب بار کونسل کی کال پر پنجاب بھر کی ماتحت عدالتوں میں وکلاء کی طرف سے ہڑتال کی گئی،وکلاء نے اعلان کیاہے کہ وکلاء پرتشدد کے ملزم گرفتار نہ کئے گئے تو آج3دسمبر کو آئی جی آفس کا گھیراؤہوگااورسول سیکرٹریٹ کو بھی بند کر دیں گے، لاہور ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن نے ملزموں کی گرفتاری تک ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کیاہے،گزشتہ روز لاہور ہائی کورٹ بار میں اجلاس کے بعد وکلاء نے ضلع کچہری، سیشن کورٹ، ایوان عدل،ماڈل ٹاؤن کچہری اور کینٹ کچہری کے مرکزی دروازوں کو تالے لگادیئے،وکلاء نے ملزم ڈاکٹروں اور دیگر اہلکاروں کی معطلی کا مطالبہ بھی کیاہے،اس سے قبل وکلاء مختلف ٹولیوں میں لاہور ہائی کورٹ بار پہنچے اوراجلاس عام منعقد کیا،اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ بار کے صدر حفیظ الرحمن چودھری نے کہا ہم لاہور بار کے وکلا ء کیساتھ ہیں،جن ڈاکٹرز نے وکلا ء پر تشدد کیا ان کیخلاف ہر صورت میں کارروائی ہوگی،اس سلسلے میں کسی قسم کی لیت و لعل ناقابل برداشت ہوگی۔لاہور ہائی کورٹ بار کے سیکرٹری فیاض رانجھا نے وکلاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا لاہور بار کیساتھ ملک کے تمام وکلا ء کھڑے ہیں،کوئی غلط فہمی میں نہ رہے،وکلا متحد ہیں،ذمہ دار ڈاکٹروں کیخلاف فوری کارروائی ہونی چاہیے۔وائی ڈی اے والے ہمارے ملزم ہیں، ہم ان کو ملزم سمجھتے ہیں اور ہم نے ان ڈاکٹروں سے بدلہ لینا ہے، پولیس اور حکومت ہمارے ملزموں کو گرفتار نہیں کر رہی، انہوں نے کہا اگر ہمارے ملزم گرفتارنہ ہوئے تو پورے پاکستان میں کوئی پولیس والا عدالتوں میں پیش نہیں ہوسکے گا۔

لڑائی تنازع

مزید : صفحہ اول