سندھ طاس معاہدہ کی خلاف ورزی پر بھارت کو بھرپور جواب دینگے،عمر ایوب

سندھ طاس معاہدہ کی خلاف ورزی پر بھارت کو بھرپور جواب دینگے،عمر ایوب

  



اسلام آ باد (سٹاف رپورٹر) وزیر توانائی عمر ایوب خان نے کہا ہے کہ اگر بھارت نے سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی کی تو بھرپور جواب دیا جائیگا،2030 تک 30 فیصد بجلی متبادل ذرائع سے حاصل کی جائے گی، انرجی مکس میں 18 سے 20 ہزار میگاواٹ ہائیڈرل شامل کرنے کی منصوبہ بندی کررہے ہیں،نہروں کے اردگرد بھی سولر پینلز نصب کریں گے،زرعی شعبے میں بہترین اور جدید ٹیکنالوجیز متعارف کروائیں گے،ہمیں غذائی تحفظ اور غذائی سیکورٹی کو سنجیدگی سے لینا ہوگا،موسمیاتی تبدیلی اکیلے پاکستان کا نہیں ساری دنیا کا مسئلہ ہے،چاہتے ہیں اضافی گیس بل صارفین کو واپس کئے جائیں،گردشی قرضہ اس وقت 850 ارب روپے ہے،گردشی گردشے کی ماہانہ رفتار میں 39 ارب سے کم ہوکر دس ارب ماہانہ ہے۔پیر کو وزیر توانائی عمر ایوب نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آبی وسائل میں سرمایہ کاری سے جی ڈی پی میں ایک فیصد اضافہ ہوگا،ہمیں غذائی تحفظ اور غذائی سیکورٹی کو سنجیدگی سے لینا ہوگا،موسمیاتی تبدیلی اکیلے پاکستان کا نہیں ساری دنیا کا مسئلہ ہے، تربیلا، منگلا،غازی بروتھا اور خانپورڈیم پر فلوٹنگ سولر پینلز نصب کرنے جارہے ہیں،نہروں کے اردگرد بھی سولر پینلز نصب کریں گے۔،ہمیں پانی کے استعمال میں انتہائی احتیاط برتنا ہوگی،ہمارے آبی ذخائر تیزی سے کم ہورہے ہیں،گزشتہ سردیوں میں صارفین سے وصول کئے گئے اضافی گیس بلوں کا کیس سپریم کورٹ میں ہے،چاہتے ہیں اضافی گیس بل صارفین کو واپس کئے جائیں۔ چیف میٹرولوجسٹ محمد ریاض احمدنے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ موسمیاتی تبدیلی سے پاکستان کے آبی وسائل پر گہرے اثرات مرتب ہورہے ہیں،درجہ حرارت میں اضافے کے باعث مستقبل میں آبی بحران سنگین ہوجائے گا،موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کے لئے اقدامات نہ کئے گئے تومشکل صورتحال کا سامنا کرنا ہوگا،مستقبل کی ضروریات کے پیش نظر ہمیں بڑے آبی ذخیرے تعمیر کرنا ہوں گے۔

عمر ایوب

مزید : صفحہ اول