اللہ تعالیٰ نے انسان کو اشرف المخلوقات بنایا ہے، عبدالحسیب خان

اللہ تعالیٰ نے انسان کو اشرف المخلوقات بنایا ہے، عبدالحسیب خان

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر) ہمارے پیارے نبیؐ پوری دنیا کیلئے رحمت العالمین بن کر دنیا میں آئے ہیں یہ بات سوشل اسٹوڈنس فورم کے زیر اہتمام اور سرسید گورنمنٹ گرلز کالج کے تعاون سے سیرت النبی ؐ کے سلسلے میں منعقدہ تقریری مقابلے بعنوان حضورؐ کا اسوۃ تعلیمی ادارے اور اکثر فلاحی ادارے مستحق افراد کیلئے بہترین خدمات انجام دے رہے ہیں۔ جن میں سوشل اسٹوڈنٹس فورم اور سرسید گورنمنٹ گرلز کالج قابل ذکر اور قابل تقلید ہیں ایسے ادارے ہمارے مستقبل کے معماروں کیلئے مشعل راہ ہیں جو انکی صلاحیتوں کو پروان چڑھانے میں اپنا بھرپور کردار ادا کررہے ہیں۔ تقریب صدر اور مہمان خصوصی سینیٹر عبدالحسیب خان نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے انسانوں کا اشرف المخلوقات بنایا ہے اللہ تعالیٰ نے قرآن پاک کا تحفہ دے کر ہم پر احسان عظیم کیا ہے اور قرآن نے ہمیں سوچنے سمجھنے کا سبق دیا ہے قرآن پاک ایک ہدایت ہے۔ نصیحت ہے تسخیر کرنے کا نسخہ ہے۔ جس سے سبق حاصل کرکے دعوت و تبلیغ میں آسانی پیدا ہوجاتی ہے۔ ہماری برائی یہ ہے کہ ہم اللہ تعالیٰ کو مانتے تو ہیں مگر اللہ کی نہیں مانتے۔ جوہدایت قرآن کے ذریعے اللہ تعالیٰ نے حضورؐ کے سینے میں اتاری آپؐ نے اس پر من و عن عمل کرکے ثابت کیا کہ قرآن علم ہے اور آپ ؐ نے خود مکمل عمل پیرا ہو کر ہمارے اتباع سنت کا اعلان کیا ہے صدر تقریب سابق ممبر صوبائی اسمبلی محفوظ یار خان ایڈوکیٹ نے کہا کہ طلباء کے درمیان سیرت النبیؐ کے پر تقریر مقابلہ کرانا ایک احسن اقدام ہے تاکہ ہمارے طلباء و سیرت نبی ؐ سے واقف ہوں اور اپنے علم و عمل سے ثابت کریں کہ ہم حضور ؐ کے امتی ہیں۔قبل ازیں فورم کے چیئرمین نفیس احمد خان خطبہ استقبالیہ پیش کیا۔ سینئر وائس چیئرمین مسعود احمد وصی نے فورم کے اغراض و مقاصد بیان کیئے۔ نائب صدر ڈاکٹر محمد رفیع احمد نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ سرسید گورنمنٹ گرلز کالج کی پرنسپل خالدہ پروین نے بھی خطاب کیا۔ پروگرام کا آغاز زینب لویانے تلاوت کلام پاک سے کیا اور نعت رسول ؐ نبیہ شفیق نے نعت رسول ؐ پیش کی۔ سیرت طیبہ پر عمل پیرا ہو کر ہم اپنی دین و دنیا سنوارسکتے ہیں۔ منصفین زاہد حسین زاہد، رخسانہ ناز عنبرین اور حسن شاہ کے مطابق کالجز میں محمد عبداللہ اول، سلامت علی دوئم اور ارج سحر سوئم آئیں جبکہ اسکولوں میں اول محمد حذیبہ، دوئم محمد عمر آئے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر