خیبر پختونخوا حکومت سوئٹزر لینڈ کیساتھ دو طرفہ تعلقات کو مزید فروغ ے گی: عاطف خان 

    خیبر پختونخوا حکومت سوئٹزر لینڈ کیساتھ دو طرفہ تعلقات کو مزید فروغ ے گی: ...

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے سنیئر وزیر برائے سیاحت، کھیل، امور نوجوانان و آثارِ قدیمہ عاطف خان نے کہا ہے کہ حکومت سوئٹزر لینڈ کے ساتھ تعاون اور روابط کو بڑھا کر دوطرفہ تعلقات کو مزید شعبوں تک وسعت دے گی۔ سنیئر وزیر عاطف خان نے ان خیالات کا اظہار خیبرپختونخوا واٹر اینڈ گورننس پروگرام کی اختتامی تقریب میں شرکت کے موقع پر کیا۔ تقریب میں وزیر بلدیات، الیکشنز و دیہی ترقی شہرام خان ترکئی، سوئزر لینڈ کے سفیر تھامس کولی، رکن صوبائی اسمبلی ظاہر شاہ طورو، ڈبلیو ایس ایس سیز کے چیف ایگزیکٹوز، یونیسف اور دیگر محکموں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔ دو سالہ واٹر گورننس پروگرام سوئس حکومت کے تعاون سے مکمل کیا گیا۔ اس پروگرام کے تحت ڈبلیو ایس ایس پی، ڈبلیو ایس ایس سی مردان کے عملے کی استعداد کار بڑھائی گئی۔ 2 سال کے دوران ان دونوں صفائی کے ذمہ دار اداروں کے ساڑھے پانچ ہزار سے زائد ملازمین کو مختلف امور پر تربیت فراہم کی گئی۔ اسی طرح محاصل میں اضافے اور منصوبہ بندی کے لئے صارفین سروے کیا گیا اور مستقبل کی ضروریات کے لئے ماسٹر پلان اور بزنس پلان تیار کیے گئے ہیں جبکہ عوامی آگاہی کے لئے مسلسل مہم بھی چلائی گئی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر بلدیات شہرام خان ترکئی کا کہنا تھا کہ صنعتی فضلے، گھریلو سیوریج اور کوڑا کرکٹ سے پانی اور ماحول آلودہ ہو رہے ہیں۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ پانی کا ضیاع اور بے دریغ استعمال کو روکنا ہوگا جس کے لیے حکومتی سرپرستی میں اقدامات اٹھائے جائیں گے تاہم اہداف کے حصول کے لئے عوام کو سوچ بدلنا اور کردار ادا کرنا ہوگا۔ صوبائی وزیر نے واٹر گورننس پروگرام کو قابل تعریف قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایس ڈی سی کے اس پروگرام سے حکومتی اداروں کو سیکھنے کا موقع ملا ہے اور ان کی کارکردگی میں واقعتاً مثبت تبدیلی آئی ہے۔ شہرام خان ترکئی نے کہا کہ فلڑیشن پلانٹس نصب کر کے سیوریج کے پانی کو صاف کر کے دریاؤں اور نہروں میں چھوڑا جائے گا۔ وزیر بلدیات نے صفائی کے ذمہ دار اداروں کے افسران کو باور کرایا کہ وہ صفائی عملے کو خصوصی اہمیت دیں اور ان کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں کیونکہ وہ سب سے مشکل کام کرتے ہیں۔ صوبائی وزیر نے سوئس حکومت کے تعاون کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے اسے مزید فروغ دینے پر زور دیا۔ تقریب سے خطاب میں سوئس سفیر تھامس کولی نے کہا کہ خیبر پختونخوا واٹر گورننس پروگرام پورے ملک کے لئے ماڈل ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان خصوصاً حکومت خیبر پختونخوا کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کر رہے ہیں جن میں پانی اور زراعت کے شعبے نمایاں ہیں۔ چیف ایگزیکٹو ڈبلیو ایس ایس پشاور اور مردان کے چیف ایگزیکٹوز اور نمائندہ یونیسف نے بھی تقریب سے خطاب کیا اور اپنی تجاویز پیش کیں 

مزید : صفحہ اول