نیب ریفرنس دائر ہوتے ہی پروڈکشن آرڈر تک سے انکار کرنے والے شاہد خاقان عباسی نے غصہ مریم اورنگزیب پر نکال دیا، عدالت کے اندر ہی کھری کھری سنادیں

نیب ریفرنس دائر ہوتے ہی پروڈکشن آرڈر تک سے انکار کرنے والے شاہد خاقان عباسی ...
نیب ریفرنس دائر ہوتے ہی پروڈکشن آرڈر تک سے انکار کرنے والے شاہد خاقان عباسی نے غصہ مریم اورنگزیب پر نکال دیا، عدالت کے اندر ہی کھری کھری سنادیں

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) نجی ٹی وی نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب کی احتساب عدالت کے اندر ہی خوب کلاس لی ہے۔

پبلک نیوز کے مطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر شاہد خاقان عباسی پارٹی رہنماﺅں پر سخت برہم نظر آئے۔ انہوں نے کارکنوں کی موجودگی میں ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب پر اظہار برہمی کیا اور انہیں جھاڑ پلادی۔ شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا پارٹی رہنماو¿ں نے مجھے مایوس کیا، احتجاج نظر آنا چاہیے تھا، احتجاج ہو تا تو نظر بھی آتا۔

خیال رہے کہ منگل کے روز پیشی کے دوران احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے ریمانڈ میں 16 دسمبر تک توسیع کردی، نیب کی جانب سے ایل این جی کیس میں ان کے خلاف ریفرنس بھی دائر کردیا گیا ہے، جس میں شاہد خاقان عباسی کیخلاف سابق سیکرٹری پٹرولیم عابد سعید اور ایل این جی کمپنی کے سابق سربراہ مبین صولت کو بھی وعدہ معاف گواہ بنایا گیا ہے۔

نیب نے ایل این جی ٹھیکہ کیس میں شاہدخاقان عباسی سمیت 9 ملزموں کو شریک ملزم بنایا ہے۔ سابق چیئرمین اوگرا سعید خان، چیئرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل،سابق وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل ،سابق ایم ڈی شیخ عمران الحق کے نام ریفرنس میں شامل ہیں اور ان کے نام ای سی ایل میں ڈال دیے گئے ہیں۔

ایل این جی ریفرنس میں کہا گیاہے کہ ملزم کرپشن اور کرپٹ پریکٹسز میں ملوث ہیں، ایک کمپنی کو 21 ارب سے زائدکافائدہ پہنچایاگیا،کمپنی کوفائدہ مارچ 2015سے ستمبر 2019تک پہنچایاگیا، اس اقدام سے2029 تک خزانے کو 47ارب روپے کانقصان ہوگا، عوام پرگیس کی مدمیں 15سال کے دوران 68ارب کابوجھ پڑے گا۔

مزید : قومی