”ٹیم کے انتخاب میں درست فیصلے کرنے کا وقت آ گیا ہے“

”ٹیم کے انتخاب میں درست فیصلے کرنے کا وقت آ گیا ہے“
”ٹیم کے انتخاب میں درست فیصلے کرنے کا وقت آ گیا ہے“

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور سابق چیف سلیکٹر معین خان نے کہا ہے کہ آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی بہت افسوسناک رہی، ٹیم کے انتخاب میں درست فیصلے کرنے کا وقت آ گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نجی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے معین خان نے کہا کہ اہم سیریز میں ناتجربہ کار کھلاڑیوں پر انحصار کیا گیا، ہمیں بہترین ٹیلنٹ پر انحصار کرتے ہوئے ایسے کھلاڑیوں کو موقع دیا جانا چاہئے جو ڈومیسٹک کرکٹ میں عمدہ کارکردگی دکھا رہے ہیں، ٹیم کی کارکردگی بہتر بنانے کا یہی واحد راستہ ہے۔

معین خان نے نوجوانوں کو موقع دینے کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ ایک وقت میں صرف ایک یا دو نئے کھلاڑی ٹیم میں ہونے چاہئیں، آسٹریلیا جیسی مضبوط ٹیم کے خلاف محمد حسنین کو آزمانا چاہیے تھا مگر اس کی جگہ نسیم شاہ اور موسیٰ خان کو لے آئے، ایسا لگتا ہے کہ ٹیم میں کھلاڑیوں کو باریاں دینے کا سلسلہ جاری ہے۔

معین خان نے کہا کہ مسلسل تبدیلیوں سے ٹیم کا مورال ڈاو¿ن ہوتا ہے، اس لئے باربارتبدیلی نہیں کی جانی چاہئیں کیونکہ ٹیم کی کارکردگی اس وقت تک بہتر نہیں ہو سکتی جب تک سلیکشن کا طریقہ کار درست نہ ہو گا، پی سی بی اپنی ذمہ داری پوری کرتے ہوئے سری لنکا کیخلاف ہوم سیریز میں ان کھلاڑیوں کو موقع دے جو ڈومیسٹک کرکٹ میں بہترین کارکردگی کے باعث انتخاب کے مستحق ہیں۔

مزید : کھیل