اے ٹی آئی نے طلباء یونین کی بحالی کیلئے حکومت کو 25دسمبر کی ڈیڈلائن دے دی

اے ٹی آئی نے طلباء یونین کی بحالی کیلئے حکومت کو 25دسمبر کی ڈیڈلائن دے دی
اے ٹی آئی نے طلباء یونین کی بحالی کیلئے حکومت کو 25دسمبر کی ڈیڈلائن دے دی

  



لاہور (صباح نیوز)انجمن طلباء اسلام کے مرکزی صدر معظم شہزاد ساہی نے حکومت کو طلباء یونین کی بحالی کیلئے 25دسمبر کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئےکہاہےکہ 25 دسمبر تک طلباء یونینز بحال نہ ہوئیں تو 30دسمبر کو  پریس کلب تا گورنر ہاؤس’’ یونین بحالی مارچ‘‘کریں گے جس میں ہزاروں طلباء شریک ہوں گے،یونینز کی بحالی کیلئے اقدام کو منطقی انجام تک پہنچانا ہوگا،وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے طلباء یونین کی بحالی کے بیان، آزادکشمیراور سندھ میں طلباء یونینز بحالی کا فیصلہ خوش آئند ہے، عمران خان طلباء یونین کی بحالی کے بیان کو حقیقت میں بدلیں،دعوی اور وعدے حکمرانوں کی پرانی روایت ہے،زبانی جمع خرچ کی بجائے عملی اقدام کی ضرورت ہے۔

مرکزی سیکریڑی جنرل محمد اکرم رضوی،نائب صدر غفران سرور، سیکریڑی اطلاعات عامر اسماعیل،ناظم صوبہ پنجاب (شمالی)سید عزیز احمد بخاری کے ہمراہ لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئےمعظم شہزاد ساہی کا کہنا تھا کہطلباء یونینز کی بحالی ناگزیز ہوچکی ہے،نان سٹیٹ ایکٹرزطلباء یونینز کی بحالی کے مطالبے کو بنیاد بناکر معصوم طالب علموں کوملک دشمن سرگرمیوں میں استعمال کرنے کی سازش میں مصروف ہیں،نوجوانوں کو اپنا اثاثہ سمجھنے والے وزیر اعظم طلباء قیادت سے کیوں خائف ہیں؟18سال کا ووٹر عمران خان کو ووٹ دینے کیلئے اہل اپنا نمائندہ چننے کیلئے شدت پسند کیوں ہے؟ 30دسمبر کو طلباء کا سمندر گورنر ہاؤس کے سامنے بدمست حکمرانوں کا تاج اورتخت بہاکرلے جائے گا۔اُنہوں نے کہا کہ حکومت طلباء یونینز پرغیر آئینی پابندی ہٹاکر طلباء برادری کے دل جیت سکتی ہے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا35سالہ جہدوجہد کو پس پشت ڈال کر ملک دشمن قوتوں کو طلباء کا سٹیک ہولڈر بنا دیا گیاہے،سرخ ایشاء کا نعرہ لگانے والے پی ٹی ایم کا جدید ایڈیشن ہیں،طلباء حقوق کے نام پر غیر ملکی ایجنڈا پورا کیا جا رہا ہے،ریاستی ادارے فارن فنڈڈ این جی اوز کی پُراسرار سرگرمیوں کی تحقیقات کریں، فارن فنڈڈ این جی اوز نے طلباء یکجہتی مارچ کے نام پر پاکستان کی نظریاتی اساس کو کمزور کرنے کی کوشش کی ہے، پاکستانی معاشرے میں کیمونزم اور سیکولر ازم کی کوئی گنجائش نہیں،سرخ سویرا کے خواب دیکھنے والے ناکام و نامراد ہوں گے۔ اُنہوں نے  کہا کہ پی ٹی ایم طلباء یونینزکے نام پر گھناؤنا کھیل کھیل رہی ہے۔ پی ٹی ایم پاک فوج کی کردار کشی کے ایجنڈا پر گامزن ہے،پوری قوم پاک فوج کی پشت پر کھڑی ہے،طلباء کے آئینی حقوق حاصل کرنے کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے،سرخ نہیں سبز سویرا پاکستان کا مقدر بنے گا،اسلام اور پاکستان دشمن بیرونی قوتیں طلباء کو اپنے ناپاک مقاصد کے لئے استعمال کرنے کی سازش کر رہی ہیں۔

انجمن طلباء اسلام کے قائدین نے مزید کہا طبقاتی نظام تعلیم کا خاتمہ ہونا چاہئے،طلباء سیاست میں بیرونی سیاسی مداخلت فساد کا سبب بنتی ہے،حکومت طلباء کے جمہوری حقوق کا احترام کرتے ہوئے طلباء یونینز کے انتخابات کا اعلان کرے،ملک کی 65فیصد یوتھ طلباء یونینز بحالی کے حق میں ہیں،طلباء برادری 35سال سے ظلم کی چکی میں پس رہی ہے،طلباء برادری اپنے حقوق کیلئے اب متحد ہو جائیں،2020 بحالی طلباء یونینز کا سال ہے، طبقاتی نظام تعلیم نے غریب طالبعلم سے تعلیم کا حق چھین رکھا ہے،قوموں کے عروج و زوال میں نوجوان نسل نے کلیدی کردار ادا کیا،ملک میں طبقاتی نظام تعلیم کو ختم کرکے غریب اور امیر طلباء کیلئے یکساں تعلیمی سہولتوں کے ساتھ پورے پاکستان میں لاگو کرنے کی ضرورت ہے،معاشرے کو امن کا گہوارہ اور پاکستان کو مستحکم بنانے کیلئے نوجوان نسل کی تربیت سب سے اہم ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور