حکومتی اقدامات کے بعد لندن میں کورونا کیسز میں کمی آنا شروع

حکومتی اقدامات کے بعد لندن میں کورونا کیسز میں کمی آنا شروع
حکومتی اقدامات کے بعد لندن میں کورونا کیسز میں کمی آنا شروع

  

لندن(طیّب عاطر ) کورونا وائرس کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق  تقریبا ہر کونسل میں برطانوی گورنمنٹ  کی جانب سے دی گئی ٹائر2 پابندیوں کے پیشِ نظر آئے روز نئے   کیسزز میں نمایاں کمی ریکارڈ کی جاری ہے۔


‎وسطی لندن میں ، جو برطانیہ کی معیشت کے لئے بہت اہم ہے ، ویسٹ منسٹر نے ہر 100،000 آبادی میں ایک ہفتہ کے دوران 100 نئے کیسزز دیکھے ہیں۔کیمڈن میں یہ شرح 84.1 ہے ، ساؤتھ وارک 104.8 میں ، آئلنگٹن 114.7 ، کینسنٹن اور چیلسی 117.2 اور لیمبیتھ میں 119.9 ۔ اس کے برعکس صرف دو کونسلز میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے ، اور وہ بہت چھوٹے ہیں ، ریڈ برج کے کیسسزمیں 1.5 فیصد اور والتھم فاریسٹ میں  0.5 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ نومبر کے آخری آیام تک مجموعی طور پر لندن کی شرح 158.3 ہوکئی جو دس دن پہلے دوسری لہر کی چوٹی کی طرح 199.4 تک  ‎ تھی۔

یاد رہے برطانوی حکومت  کی جانب سے کورونا وائرس کی دوسری لہر کے پیشِ نظر 5 نومبر کو لگایا گیا لاک ڈاؤن 2 دسمبر2020 بروز بدھ ٹائر 1 بنیادی پابندیوں کے ساتھ کھول دیا جایگا۔ ریٹیل سیکٹر ، ریسٹورنٹ، بار و پبز کو بنیادی پابندیوں(جس میں سماجی فاصلہ اور فیس ماسک شامل )کے ساتھ حدود کے اندر  بزنس کرنے کی اجازت ہو گی ۔

مزید :

برطانیہ -کورونا وائرس -