کنزیومر الیکٹرانکس کے لئے پاکستان  ایک ابھرتی ہوئی مارکیٹ ہے:  ڈائریکٹر ویسٹرن ڈیجیٹل کارپوریشن 

کنزیومر الیکٹرانکس کے لئے پاکستان  ایک ابھرتی ہوئی مارکیٹ ہے:  ڈائریکٹر ...
کنزیومر الیکٹرانکس کے لئے پاکستان  ایک ابھرتی ہوئی مارکیٹ ہے:  ڈائریکٹر ویسٹرن ڈیجیٹل کارپوریشن 

  

لاہور (ویب ڈیسک) کنزیومر الیکٹرانکس کے لئے پاکستان  ایک ابھرتی ہوئی مارکیٹ ہے  یہ کہنا تھا  خواجہ سیف الدین  جو کہ ڈائریکٹر سیلز ویسٹرن ڈیجیٹل کارپوریشن  ہیں۔

پاکستانی مارکیٹ  میں بزنس کے امکانات  کے بارے میں ان کا کہنا ہے کہ پاکستان دنیا میں آبادی کے اعتبار سے چھٹا بڑا ملک ہے جس کی آبادی 22 کروڑ سے زائد ہے جبکہ یہاں 58 فیصد شرح خواندگی ہے۔ کنزیومر الیکٹرانکس کے لئے یہ ایک ابھرتی ہوئی مارکیٹ ہے۔ سال 2018 میں یہ کمیونکیشن کے سامان کا سب سے پرکشش شعبہ تھا جس کی مجموعی مارکیٹ ویلیو کا ریونیو 68.4 فیصد کے ساتھ 6.5 ارب ڈالرز رہا۔ 

اقوام متحدہ کی پاپولیشن فنڈ رپورٹ کے مطابق پاکستان دنیا میں نوجوان آبادی رکھنے والا پانچواں ملک ہے، جس کی 63 فیصد آبادی کی عمر 15 سال سے 33 سال کے درمیان ہے اور یہاں نوجوان افراد ٹیکنالوجی کے استعمال میں مہارت رکھتے ہیں۔ اس حقیقت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ ملک میں اسمارٹ فون کا پھیلاؤ 40 فیصد تک ہوچکا ہے اور موبائل فون صارفین کی تعداد 16 کروڑ 90 لاکھ ہوچکی ہے۔ ملک میں موبائل صارفین کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ اسی طرح، ملک میں سالانہ 20 ہزار سے زائد آئی ٹی گریجویٹس تیار ہورہے ہیں، ان میں سال 2010 سے اب تک 700 سے زائد ٹیکنالوجی اسٹارٹ اپس شامل ہیں جن میں سے 70 فیصد تک اسٹارٹ اپس اب تک بدستور فعال ہیں۔ 

دوسری جانب، موجودہ حکومت ٹیکنالوجی سے چلنے والے کاروبار کی بھی حوصلہ افزائی کررہی ہے اور معیشت کی جامع دستاویز بندی پر مستحکم طریقے سے زور دے رہی ہے جس میں ڈیٹا اکھٹا کرنے کا بڑا کردار سامنے آتا ہے۔ سٹوریج ڈیوائسز کے استعمال سے قیمتی ڈیٹا کی حفاظت کے لئے پاکستانی صارفین کے رجحانات  کے بارے میں انہوں  نے ڈیلی پاکستان سے گفتگو کرتے کہا  کہ لوگوں میں ڈیٹا کے تحفظ کے لئے محفوظ ذرائع پر توجہ بڑھ رہی ہے اور ڈیجیٹائزیشن کے عمل نے ہر طالب علم اور ہر طرح کے ملازمت پیشہ شخص کی زندگی میں ڈیٹا محفوظ کرنے کا عمل بڑھا دیا ہے۔ اس وجہ سے آج دنیا میں ڈیٹا نمایاں کردار ادا کررہا ہے اور یہ مارکیٹنگ اداروں کے ساتھ ساتھ عام صارفین کے لئے بھی اتنا ہی اہم ہے۔ 

پاکستان میں اسٹوریج ڈیوائسز کے پھیلاؤ کا جب معاملہ آتا ہے تو اس مارکیٹ میں بدستور خلا ء موجود ہے اور اس مارکیٹ میں اپنی جگہ بنانے کے لئے بہت زیادہ گنجائش ہے۔ اگرچہ ڈیٹا اسٹوریج اس انڈسٹری سے مخصوص نہیں ہے لیکن اگر آپ ملک میں آئی ٹی سیکٹر کو اجاگر کرتے ہیں جو بعض دیگر شعبوں کی طرح انتہائی تیزی سے ترقی کررہا ہے تو پھر اگلے چار سال میں ملکی مجموعی پیداوار (جی ڈی پی) میں اس کا حصہ دو گنا ہوجائے گا اور توقع ہے اگلے چار سال میں یہ 7 ارب ڈالر تک جاپہنچے گا۔ 

 پاکستانی مارکیٹ میں مسابقت  کے حوالے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ  پاکستان میں نئے خواہش مندوں کے لئے مساوی بنیادوں پر مواقع ہیں کیونکہ اس وقت موجود مارکیٹ میں خلاء کے باعث متعدد کمپنیوں کے لئے کافی گنجائش نکلتی ہے۔ مارکیٹ میں وہ پہلے سے ہی قائدانہ کردار کی حامل ہیں لیکن ویسٹرن ڈیجیٹل جدت کے اعتبار سے قائدانہ کردار ادا کرتا ہے اور اس میں یو ایس پی کو مستحکم برتری حاصل ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ویسٹرن ڈیجیٹل اپنی اعلیٰ معیار کی مصنوعات کے طور پر پہچانا جاتا ہے اور دنیا بھر میں اس نے اپنا معتبر نام بنالیا ہے۔  رواں سال، کمپنی نے معیاری کاروباری سہولیات کی فراہمی کے لئے آئی ٹی خدمات کے استعمال میں جدت انگیز طریقے اختیار کرنے پر سی آئی او 100 ایوارڈ جیتا ہے 

 ویسٹرن ڈیجیٹل کی متعدد ڈیوائسز کے استعمال کے لئے (کاروباری اور انفرادی) صارفین کے لئے میسر آپشنز کے بارے میں کہتے ہیں کہ پاکستانی مارکیٹ میں اس وقت ڈیٹا اسٹوریج پر توجہ دینے کے لئے کچھ مصنوعات پیش کی جارہی ہیں۔ کرونا وائرس کے باعث مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد ڈیجیٹائز سہولیات کی جانب تیزی سے آئے اور انکی طلب بڑھ گئی۔ کاروباری ادارے، چھوٹے و درمیانی کاروباری ادارے اور انفرادی طور پر لوگ محفوظ اسٹوریج آپشنز پر توجہ دے رہے ہیں اور یقینا وہ مستند اور پائیدار مصنوعات کے حصول پر غور کریں گے۔ 

ان میں ویسٹرن ڈیجیٹل کی مائی پاسپورٹ اور مائی بک، مائی پاسپورٹ ایس ایس ڈی، ڈبلیو ڈی پرپل (سیکورٹی اور اسمارٹ ویڈیو کے لئے مخصوص پورٹ فولیو بمعہ مکمل رینج)، ڈبلیو ڈی انٹرنل ایس ایس ڈی (ڈبلیو ڈی گرین، ڈبلیو ڈی بلیو حال ہی میں متعارف ہوئے)، ڈبلیو ڈی بلیو ایس این 550 این وی ایم ای شامل ہیں۔ 

اسی طرح، اس کے سان ڈسک برانڈ کے تحت موبائل اسٹوریج سلوشنز (ایم ایس ایس): (ڈوئل ڈرائیو اور آئی ایکسپانڈ) پاکستان کے لئے یو ایس بی کا متبادل ڈوئل ڈرائیو ہے، یہ آپ کے اسمارٹ فون کے لئے نئی یو ایس بی ہے۔ اور ایکسٹرنل ایس ایس ڈی: نئی سان ڈسک ایکسٹریم پورٹیبل پرو ایس ایس ڈی کے ساتھ ساتھ اسکی پروڈکٹس میں وسیع اقسام کے یو ایس بی اور کارڈز بھی شامل ہیں۔  

 پاکستان میں ویسٹرن ڈیجیٹل کے آغاز کی بدولت مستقبل میں صارفین فائدہ اٹھا سکیں گے، ماضی میں ان برانڈ کی ڈیوائسز ڈسٹری بیوٹرز اور بے ضابطہ ذرائع سے میسر تھیں۔ خواجہ سیف الدین نے اس حوالے سے کہا کہ  ملک میں باضابطہ کسی بھی برانڈ کے آغاز سے صارفین کو متعدد فائدے حاصل ہوتے ہیں، بالخصوص جب آپ کے پاس وہاں پہلے سے کمزور ذرائع ہوں۔  سب سے پہلی بات یہ ہے کہ جب مقامی طور پر کوئی بااختیار ڈیلر موجود ہوتا ہے تو پھر  ہر خریداری کے ساتھ سیلز سروس کی ایک اہم سہولت حاصل ہوجاتی ہے۔ پاکسان مں ہمارے صارفین اب پوسٹ سیلز سروس سے بھی مستفید ہسکتے ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ ہم انہیں زیادہ بہتر اور براہ راست انداز سے خدمات فراہم کرسکیں گے۔ اسی طرح، لوگ اب ہمارے وسیع پورٹ فویلو سے بھی پروڈکٹ کا انتخاب کرسکیں گے جو یہاں پہلے محدود تعداد میں موجود تھا۔ 

یہاں باضابطہ آغاز سے قبل یہ پروڈکٹ ملک میں بھیجی جاتی تھی اور اسکی خریداری کی جاتی تھی۔ اس کی پروڈکٹ غیرمعمولی  معیار کی ہوتی ہے اور اس میں کوئی تکنیکی مسئلہ عام طور پر ذرا کم ہی نکلتا تھا۔  جب مصنوعات کو کسی خاص مقام پر بے ضابطہ طریقوں سے متعارف کرایا جاتا ہے تو خریداری کے بعد اسکی وارنٹی سے فائدہ نہیں اٹھایا جاسکتا جس کی وجہ سے صارفین بددل ہوتے ہیں۔ اسی وجہ سے پاکستان میں ہماری باضابطہ موجودگی سے صارفین کو اطمینان میسر ہوگا اور وہ مختلف اقسام کی مصنوعات پر 3 سال، 5 سال اور تاحیات وارنٹی کے علاوہ پوسٹ سیلز سروسز بھی حاصل کرسکیں گے۔ ویسٹرن ڈیجیٹل اس مارکیٹ میں امکانات سے آگاہ ہے، اسی وجہ سے ہم اپنے ڈسٹری بیوشن چینلز میں وسعت لائے ہیں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کی ہماری مصنوعات تک رسائی حاصل ہوسکے۔ 

اس کے علاوہ ویسٹرن ڈیجیٹل نے پاکستان میں اصلی پروڈکٹ خریدنے کی مہم کا بھی آغاز کیا ہے۔ اس مہم میں مارکیٹ کے اندر جعلی مصنوعات کی موجودگی سے پہنچنے والے اثرات، صارفین اور انکے ڈیٹا کو درپیش متعدد خطرات سے متعلق آگہی پھیلائی گئی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ انہیں مستند ڈرائیوز کے استعمال کی تجویز دی گئی ہے۔ اس مہم میں خصوصی باضابطہ اسٹکرز کو اجاگر کیا جاتا ہے جو اسکی تمام مصنوعات پر موجود ہوتا ہے اور ان پر اسٹکرز لگانے کا مقصد یہی ہوتا ہے کہ ہمارے صارفین اصلی اور مصدقہ پروڈکٹ پہچان سکیں۔

مزید :

بزنس -