سابق وزیراعظم میرظفراللہ خان جمالی کی نمازِ جنازہ ادا کردی گئی

سابق وزیراعظم میرظفراللہ خان جمالی کی نمازِ جنازہ ادا کردی گئی
سابق وزیراعظم میرظفراللہ خان جمالی کی نمازِ جنازہ ادا کردی گئی

  

نصیرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیراعظم میر ظفراللہ خان جمالی کی نمازجنازہ ان کے آبائی علاقے روجھان جمالی میں ادا کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم میر ظفراللہ خان جمالی کو پولیس کے چاک چوبند دستہ نے سلامی پیش کی۔ نماز جنازہ میں سیاسی سماجی شخصیات سمیت علاقے کے معززین نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ان کے آبائی جعفرآباد کےعلاقے روجھان جمالی میں سپردخاک کیاگیا۔

 یاد رہے کہ سابق وزیراعظم ظفراللہ جمالی کو دل کا دورہ پڑنے پر نجی اسپتال کے آئی سی یو میں منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ انتقال کرگئے۔

پاکستان کے سابق وزیر اعظم میر ظفر اللہ خان جمالی یکم جنوری 1944ء کو بلوچستان کے ضلع نصیرآباد کے گائوں روجھان جمالی میں پیدا ہوئے ۔ابتدائی تعلیم روجھان جمالی میں ہی حاصل کی بعد ازاں سینٹ لارنس کالج گھوڑا گلی مری، ایچیسن کالج لاہور اور 1965ء میں گورنمنٹ کالج لاہور سے تاریخ میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کی۔

میر ظفر اللہ جمالی سابق صدر پرویز مشرف کے دور حکومت میں وزیراعظم پاکستان منتخب ہوئے تھے، وہ 2002ء سے 2004ء تک اس عہدے پر رہے۔ انہوں نے تقریباً 55 برس قبل سیاسی کیرئیر کا آغازکیا۔ وہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر بھی رہ چکے ہیں۔وہ دو مرتبہ بلوچستان کے نگراں وزیراعلیٰ بھی رہے، انہوں نے 1999ء میں نواز شریف کی حکومت کا تختہ الٹنے اور شریف خاندان کی جلاوطنی کے بعد مسلم لیگ ق میں شمولیت اختیار کر لی تھی۔

مزید :

قومی -