مسلم لیگ ن امارات کے زیر اہتمام متحدہ عرب امارات کے پچاسویں قومی دن کے موقع پر گرینڈ جشن کا اہتمام

مسلم لیگ ن امارات کے زیر اہتمام متحدہ عرب امارات کے پچاسویں قومی دن کے موقع ...
مسلم لیگ ن امارات کے زیر اہتمام متحدہ عرب امارات کے پچاسویں قومی دن کے موقع پر گرینڈ جشن کا اہتمام

  

دبئی (طاہر منیر طاہر) متحدہ عرب امارات کے پچاسویں قومی دن کے موقع پر پاکستان مسلم لیگ ن نے ایک گرینڈ تقریب کا انعقاد کیا۔ جہاں متحدہ عرب امارات کو معرض وجود میں آئے پچاس سال پورے ہوئے وہاں پاک امارات دوستی کے پچاس سال بھی پورے ہوگئے۔ پاک امارات دوستی بہت پرانی اور لازوال ہے۔ پاکستان وہ واحد ملک تھا جس نے 1971ءمیں سب سے پہلے امارات کو تسلیم کیا۔

امارات کے قیام اور پاک امارات دوستی کی گولڈن جوبلی کی تقریب کا اہتمام پاکستان مسلم لیگ ن متحدہ عرب امارات کے جنرل سیکرٹری چودھری ظفر اقبال نے کیا جس میں مسلم لیگ ن امارات کے دونوں گروپس نے بھرپور انداز سے شرکت کی۔ امارات بھر سے مسلم لیگ ن کے کارکنوں، عہدیداروں اور پاکستانی کمیونٹی کے دو سو سے زائد لوگوں نے تقریب کو رونق بخشی۔

تقریب ہذا میں پاکستان سے پی ایم ایل این کی ایم پی اے زیب النسا، پی ایم ایل این کے صدر غلام مصطفی مغل، سینئر نائب صدر خواجہ عبدالوحید پال، چیئرمین محمد غوث قادری، حاجی محمد نواز، راجہ ابوبکر آفندی، شہزاد بٹ، ملک دوست محمد اعوان، جان قادر، راجہ ظہیر سملالوی، غلام محی الدین، عبدالمجید مغل، شہزاد ملک، چودھری عبدالغفار، شہباز غفار، عبدالرزاق گجر، شاہ نواز، عامر سہیل گھمن، محمد نعیم، راﺅ اکبر ساقی، محمد جاوید، عرفان اقبال طور، غلام صدیق اعوان، فیصل الطاف اور شوکت بٹ کے علاوہ بہت سے لوگوں نے شرکت کی۔

اس موقع پر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے امارات کے قیام کے پچاس سال پورے ہونے پر امارات کے حکمرانوں اور عوام کو مبارکباد پیش کی اور ان کے لیے نیک تمناﺅں کا اظہار کیا۔ مقررین نے کہا کہ 1971ءمیں آزادی حاصل کرنے والا یہ ملک آج عظمت کی بلندیوں کو چھورہا ہے اور دنیا کے ترقی یافتہ ترین ممالک کی صف اول میں شمار ہوتا ہے۔ یہاں کے حکمرانوں کے کوشش اور محنت سے امارات دنیا کے نقشہ پر ایک ترقی یافتہ ملک بن کر اُبھرا ہے۔ یہاں کے حکمران اپنے ملک کے ساتھ مخلص ہیں یہی وجہ ہے کہ آج امارات کا دنیا بھر میں نام ہے اور دنیا کے 200 سے زائد ممالک کے لوگ یہاں موجود ہیں۔حکومت نے بھی لوگوں کو ہر طرح کی سہولیات اور پر تحفظ ماحول فراہم کررکھا ہے۔

مقررین نے آخر میں یہ کہا کہ کاش پاکستان بھی متحدہ عرب امارات کی طرح ترقی کرے اور ملک کو کوئی مخلص لیڈر مل جائے اور پاکستان بھی اسی طرح ترقی کی منازل طے کرے۔

مزید :

تارکین پاکستان -