ایرانی فوج اور طالبان کے درمیان سرحد پر جھڑپ، وجہ ایسی کہ دنیا دنگ رہ گئی

ایرانی فوج اور طالبان کے درمیان سرحد پر جھڑپ، وجہ ایسی کہ دنیا دنگ رہ گئی
ایرانی فوج اور طالبان کے درمیان سرحد پر جھڑپ، وجہ ایسی کہ دنیا دنگ رہ گئی

  

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) طالبان اور ایرانی فوج کے درمیان گزشتہ روز سرحد پر ایک جھڑپ ہو گئی، جس کے بعد اب صورتحال کنٹرول میں بتائی جا رہی ہے۔ ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق ایران اور افغانستان دونوں کی طرف سے اس جھڑپ کی تصدیق کر دی گئی ہے تاہم ایران کی طرف سے ابتدائی طور پر اس جھڑپ کو مقامی لوگوں کے درمیان ہونے والا معمولی نوعیت کا جھگڑا قرار دیا گیا ہے جبکہ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بتایا ہے کہ یہ واقعہ ایک غلط فہمی کے نتیجے میں پیش آیا۔

رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ افغان صوبے نمروز کے ضلع شگھلک میں ایران کی سرحد پر پیش آیا۔ فائرنگ بند ہونے پر دونوں طرف کے حکام کے درمیان ایک میٹنگ ہوئی۔ایرانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق بھی یہ واقعہ طالبان کو ہونے والی ایک غلطی فہمی کے نتیجے میں پیش آیا۔ ایرانی میڈیا نے بتایا ہے کہ طالبان نے ایران کے کسانوں پر فائرنگ کر دی تھی۔ انہیں غلط فہمی ہوئی تھی کہ یہ لوگ بارڈر کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔ ان کی فائرنگ کے بعد ایرانی فوج نے بھی جوابی کارروائی کی۔ اس جھڑپ میں خوش قسمتی سے کوئی ہلاکت نہیں ہوئی۔

مزید :

بین الاقوامی -