مردہ اپنے جنازے کی تیاری کے دوران زندہ ہوگیا

مردہ اپنے جنازے کی تیاری کے دوران زندہ ہوگیا
مردہ اپنے جنازے کی تیاری کے دوران زندہ ہوگیا

  

برازیلیا(مانیٹرنگ ڈیسک) برازیل میں ڈاکٹروں کی طرف سے مردہ قرار دیا گیا آدمی اپنے جنازے میں زندہ ہو گیا۔ دی مرر کے مطابق برازیل کے شہر یورواکو کا رہائشی 62سالہ جوز ربیرو ڈا سیلوا نامی یہ شخص منہ کے کینسر میں مبتلا تھا اور ہسپتال میں داخل تھا جہاں ڈاکٹروں نے غلطی سے اسے مردہ قرار دے دیا۔

مردہ قرار دیئے جانے کے بعد جوز ریبرو کی ’لاش‘باڈی بیگ میں ڈال دی گئی۔ وہ پانچ گھنٹے تک باڈی بیگ میں ہسپتال میں پڑا رہا، جس کے بعد اسے 100کلومیٹر دور ریالما میونسپلٹی میں واقع ایک فیونرل ہوم بھجوا دیا گیا جہاں اس کی تجہیزو تدفین کی تیاری جاری تھی کہ فیونرل ہوم کے ایک ورکر کو اس میں زندگی کی رمق کا احساس ہوا۔

ورکر کو لگا جیسے میت سانس لے رہی ہے۔ جب اس نے دیگر ورکرز کو بتایا اور انہوں نے بغور مشاہدہ کیا تو جوز ربیرو واقعی سانس لے رہا تھا، جس پر اسے فوری طور پر قریبی ہیلتھ سنٹر منتقل کیا گیا۔ جہاں وہ تاحال زیرعلاج ہے۔ جوز ربیرو کی بہن اپریسیڈا کا کہنا ہے کہ ”مجھے فیونرل ہوم کے ایک ورکر نے کال کرکے بتایا کہ میرا بھائی زندہ ہے اور ہسپتال میں ہے۔ اس کی بات سن کر مجھے اپنے کانوں پر یقین ہی نہ آیا۔ میں بھاگم بھاگ ہسپتال پہنچی جہاں میرا بھائی واقعی زندہ موجود تھا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -