راولپنڈی ٹیسٹ، انگلینڈ کے خلاف پاکستان نے سات وکٹوں کے نقصان پر 499رنز بنا لیے

راولپنڈی ٹیسٹ، انگلینڈ کے خلاف پاکستان نے سات وکٹوں کے نقصان پر 499رنز بنا لیے
راولپنڈی ٹیسٹ، انگلینڈ کے خلاف پاکستان نے سات وکٹوں کے نقصان پر 499رنز بنا لیے

  

راولپنڈی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ٹیسٹ میچ کا تیسرا دن ختم ہوگیا، جہاں پاکستان نے 7 وکٹوں کے نقصان پر 499 رنز بنالیے۔ 

 تیسرے روز پاکستان نے اپنی پہلی نامکمل اننگز کا آغاز 181 رنز سے کیا اور دونوں اوپنرز عبداللّٰہ شفیق اور امام الحق نے 66 اوورز تک پُر اعتماد بیٹنگ کی اور ڈبل سنچری پارٹنرشپ قائم کی۔دن کے آغاز پر ہی عبداللّٰہ شفیق نے سنچری سکور کی، انہوں نے 177 گیندیں کھیلیں اور 3 چھکوں اور 10 چوکوں کی مدد سے سنچری بنائی جو ان کے ٹیسٹ کیریئر کی تیسری سنچری ہے۔عبداللّٰہ شفیق کے سنچری مکمل کرنے کے کچھ ہی دیر بعد پہلے سیشن میں ہی امام الحق نے بھی سنچری بنائی۔

امام الحق نے 180 گیندیں کھیل کر 1 چھکے اور 14 چوکوں کی مدد سے سنچری مکمل کی اور ٹیم کے سکور کو 214 تک پہنچایا۔ انگلش باولرز 225 کے مجموعی سکور پر پاکستان کی پہلی وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے جب عبداللّٰہ شفیق 114 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔ٹیم کے دوسرے اوپنر امام الحق 245 کے مجموعے پر 121 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔انگلینڈ کے خلاف پاکستان کی تیسری وکٹ 290 رنز پر گری جب اظہر علی 27 رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو ہوئے۔انگلش ٹیم کے خلاف پاکستان کی چوتھی وکٹ 413 رنز پر گری جب ڈیبیو کرنے والے سعود شکیل 37 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ 

 ان وکٹوں کے گرنے کے درمیان میں کپتان بابر اعظم نے اپنی ذمہ دارانہ بیٹنگ جاری رکھی اور اپنے کیریئر کی آٹھویں سنچری بھی مکمل کی۔ بابر اعظم نے محمد رضوان کے ہمراہ 60 رنز کی برق رفتار پارٹنر شپ بنائی۔ تاہم 473 کے مجموعے پر پہلے 136 رنز بنانے والے بابر اعظم اور پھر صرف دو رنز کے اضافے کے بعد 475 کے مجموعے پر 29 رنز بنانے والے محمد رضوان بھی پویلین لوٹ گئے۔ آج کے دن آخری آؤٹ ہونے والے بیٹر نسیم شاہ تھے جنہوں نے 15 رنز کی اننگز کھیلی۔ 

خراب روشنی کے باعث جب تیسرے روز کھیل کا اختتام ہوا تو اس وقت تک قومی ٹیم نے 7 وکٹوں کے نقصان پر 499 رنز بنالیے تھے، جبکہ اس انگلینڈ کا خسارہ کم کرنے کے لیے مزید 158 رنز درکار ہیں۔  

 پہلے میچ کے پہلے دن انگلینڈ نے صرف 4 وکٹیں گنوا کر 506 رنز بنائے تھے۔صرف ایک ہی دن کے دوران انگلینڈ کے چار بلے بازوں زیک کراؤلے، بین ڈکیٹ، اولی پوپ اور ہیری بروک نے سنچریاں سکور کیں۔ دوسرے روز پاکستان نے انگلینڈ کے 657 رنز کے جواب میں بغیر کسی نقصان کے 181 رنز بنائے تھے۔ 

مزید :

کھیل -