اپنی بجلی خود پیدا کرکے مہینوں تک بنا چارجنگ چلنے والی الیکٹرک کار

اپنی بجلی خود پیدا کرکے مہینوں تک بنا چارجنگ چلنے والی الیکٹرک کار
اپنی بجلی خود پیدا کرکے مہینوں تک بنا چارجنگ چلنے والی الیکٹرک کار

  

ایمسٹر ڈیم (ڈیلی پاکستان آن لائن) دنیا بھر میں الیکٹرک کاروں کی مانگ میں تیزی کے ساتھ اضافہ ہو رہا ہے جس کی بنیادی وجہ ماحول کو آلودگی سے پاک کرنا ہے لیکن اب ایک ایسی الیکٹرک کار سامنے آئی ہے جو اپنی بجلی خود ہی پیدا کرتی ہے۔ انٹرپرینیور میگزین کے مطابق  ایک ڈچ سٹارٹ اپ کمپنی  نے "لائٹ ایئر او" نامی  چار دروازوں والی الیکٹرک کار بنائی ہے جس کے ہڈ اور چھت پر 50 مربع فٹ سے زیادہ سولر پینل لگے ہوئے ہیں جس کو چلاتے ہوئے آپ  روزانہ اتنی بجلی پیدا کرسکتے ہیں جس سے گاڑی  43 میل تک چل سکے۔

ری چارج کیے بغیر اس الیکٹرک گاڑی کو مہینوں تک استعمال کیا جا سکتا ہے۔ لائٹ ایئر  او   دنیا کی پہلی شمسی توانائی سے چلنے والی آٹوموبل کو مینوفیکچررز نے ایسے ہی خیال کو ذہن میں رکھ کر ڈیزائن کیا تھا۔ یہ نیا تصور ایسے وقت میں کافی پرکشش لگتا ہے جب بہت سے الیکٹرک کار بنانے والے رینج بڑھانے کے لیے بیٹریوں کی تعداد میں اضافہ کر رہے ہیں تاہم  لائٹ ایئر ایک مختلف طریقہ استعمال کرتی ہے، یہ   کم بیٹریاں استعمال کرتے ہوئے اپنی حد کو بڑھانے کے لیے شمسی توانائی کو استعمال کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ یہ نئی الیکٹرک کار  اسی کمپنی نے بنائی ہے جو پورش باکسٹر بناتی ہے۔ اس نئی گاڑی کی پہلی کھیپ  فن لینڈ میں تیاری کے مراحل میں ہے۔

لائٹ ایئر کے سی ای او اور شریک بانی، لیکس ہوفسلوٹ نے ایک بیان میں کہا، 'لائٹ ایئر او کی پیداوار شروع کرنا، پہلی سولر کار، ہمیں ہر جگہ، ہر ایک کے لیے صاف نقل و حرکت کے اپنے مشن کے ایک بڑے قدم کے قریب لاتی ہے۔ہوسکتا ہے کہ ہم یہ حاصل کرنے والے پہلے شخص ہوں، لیکن میں یقینی طور پر امید کرتا ہوں کہ ہم آخری نہیں ہیں۔'

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -