ٹکٹوں کے امیدواروں کی مجلس  

ٹکٹوں کے امیدواروں کی مجلس  
ٹکٹوں کے امیدواروں کی مجلس  

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


تحریر: ڈاکٹر رانا محمد عبداللہ (پی پی 79 سرگودھا)

 نواز شریف نے پوری سینئر مسلم لیگی قیادت کے ساتھ الیکشن میں ٹکٹوں کیلئے موذوں امیدواروں کے انتخاب  کیلئے  ضلع سرگودھا کا چناؤ سب سے پہلے کیا۔میں خود بھی  امیدوارہوں ، اس لیے اس انٹرویو کا یہ تجربہ  حسیں یادبن گیا۔تین گھنٹے نوازشریف کو دیکھا اور سنا،احساسات کی لذت ابھی بھی محسوس ہورہی ہے۔
نوازشریف کی  متانت،بردباری،معاملہ فہمی، بزلہ سنجی،حاضر دماغی ،نوجوانوں کی حوصلہ افزائی،سیاسی بصیرت اور محفل کو خوشگوار رکھنے کیلئے فقرہ بازی نے پورے ہال کو اپنے سحر میں جکڑے رکھا،ایک ہی سیٹ کے متحارب امیدوار باہمی گتھم گتھا ہونے کی بجائے اعلی' اخلاق کا عملی مظہر بنے ہوئے تھے،کسی ماتھے پر بل دیکھا اور نہ کسی کی تذلیل ہوئی،جہاں سیاسی دنگل ہونا تھا اپنے مخالف امیدوار کے کردار کی دھجیاں اڑانی تھیں ،وہاں محبت   سے اپنے سیاسی خاندان کے بڑے اور محبوب لیڈر کو مرعوب کرنےکی سعی مسلسل تھی۔کیاہی اچھا ہو ہمارے ملک کی سیاست میں گالم گلوچ اور الزام تراشی کی جگہ ایسا ہی حسن اخلاق آجائے، یقین مانیں کسی فلم یا تھیٹر میں وہ مزہ نہیں آیا
جواس سیاسی سیشن میں لذت وحلاوت محسوس ہوئی۔اسکی تصدیق آپ اس افتتاحی اجلاس میں شریک کسی بھی شحص سےکرسکتےہیں چاہے وہ انٹرویو دینے والوں میں تھا یا لینے والوں میں، گوہر بٹ نے صحیح کہاتھا
" میاں جدوں آوے گا لگ پتہ جائے گا"۔

۔

نوٹ: یہ مصنف کا ذاتی نقطہ نظر ہے جس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں۔

۔

 اگرآپ بھی ڈیلی پاکستان کیلئے بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو اپنی تحاریر ای میل ایڈریس ’zubair@dailypakistan.com.pk‘ یا واٹس ایپ "03009194327" پر بھیج دیں۔

مزید :

بلاگ -