اسلام کے نام پر پھر اسلام آباد کی لڑائی لڑی جارہی ہے،ایمل ولی

اسلام کے نام پر پھر اسلام آباد کی لڑائی لڑی جارہی ہے،ایمل ولی
اسلام کے نام پر پھر اسلام آباد کی لڑائی لڑی جارہی ہے،ایمل ولی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن) اے این پی کے رہنما ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ اسلام کے حصول کے نام پر پھر اسلام آباد کی لڑائی لڑی جارہی ہے۔

پشاور میں ورکرزکنونشن سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے انتخابات میں اتنے لوگ نہیں تھے جتنے ہمارے اسٹیج پر موجود ہیں۔پاکستان بننے کے بعد باچاخان نے اس ملک کو آباد کرنے کے لئے سب کو آواز دی، پشتونوں کی حقوق کے لئے جب بھی آواز اٹھائی تو بیرونی ایجنٹ کے الزامات لگے، اے این پی نے 11 ممبران اسمبلی کے زور پر چھوٹے صوبوں کو آئینی حقوق دلائے۔

اے این پی رہنما نے کہا کہ جو ٹکر کے لوگ ہونے کے دعوے کرتے تھے وہ ایک تھپڑ کے لوگ ثابت ہوئے، 18ویں ترمیم کا خاتمہ دراصل پاکستان کا خاتمہ ہے، اگر ملک کو بچانے کے لئے پشتونوں کے حقوق سے دستبرداری درکار ہوئی تو کسی صورت پیچھے نہیں ہٹیں گے، 6 ہزارسے زائد میگاواٹ کی بجلی پیدا کرنے والے صوبے کو آدھی بجلی بھی نہیں دی جارہی۔

انہوں نے کہا کہ گندم پر اگر پہلا حق پنجاب کا ہے تو بجلی پرسب سے پہلا حق پختونخوا کا ہے، اگر ہمیں بجلی پر حق نہیں دیا جاتا تو پھر پشتونوں کو پنجاب کی بجلی بند کرنے کا حق حاصل ہے۔