ورلڈ کپ ، ٹاپ تھری سپنرز ایکشن میں نظر نہیں آئینگے

ورلڈ کپ ، ٹاپ تھری سپنرز ایکشن میں نظر نہیں آئینگے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور( سپورٹس رپورٹر)انٹرنیشنل کرکٹ کونسل( آئی سی سی) کی ایک روزہ کرکٹ کی باؤلرز کی رینکنگ کے ابتدائی دس بہترین باؤلرز میں شامل تین اسپنرز غیر قانونی ایکشن کے باعث پابندی کا شکار ہیں۔ آئی سی سی کی جانب سے جاری کردہ تازہ درجہ بندی کے مطابق پاکستانی اسپنر سعید اجمل پہلے، ویسٹ انڈین اسپنر سنیل نارائن دوسرے اور پاکستان کے ایک اور اسپنر محمد حفیظ پ آٹھویں درجے پر موجود ہیں لیکن یہ تینوں فاسٹ باؤلرز غیر قانونی ایکشن کے باعث ورلڈ کپ میں باؤلنگ کرنے سے محروم رہیں گے۔ آئی سی سی نے نو ستمبر کو آف اسپنر سعید اجمل کو مشکوک باؤلنگ ایکشن کے باعث باؤلنگ کرانے سے روک دیا تھا۔اجمل کی نہ صرف دوسرا بلکہ روایتی آف اسپن گیند کو غیر قانونی قرار دیا گیا تھا۔ آئی سی سی کے ا آزاد تجزیے میں انکشاف ہوا تھا کہ اجمل کی تمام گیندیں آئی سی سی کی مقررہ حد 15 ڈگری سے متجاوز ہیں۔37 سالہ پاکستانی اسپنر ان دنوں دوسرا کے موجد ثقلین مشتاق کی زیر نگرانی اپنا ایکشن درست کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں اور جلد کرکٹ میں واپسی کے لیے پرعزم ہیں۔ویسٹ انڈین اسپنر سنیل نارائن ایک روزہ کرکٹ میں باؤلرز کی رینکنگ میں دوسرے بہترین باؤلر ہیں اور گزشتہ سال چیمپیئنز لیگ کے دوران ان کا ایکشن دو بار مشکوک رپورٹ ہوا تھا جس کے بعد بی سی سی آئی کے زیر اہتمام کسی بھی ایونٹ میں ان کی باؤلنگ پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔اسپنر نے گزشتہ دنوں ورلڈ کپ اسکواڈ سے دستبرداری کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ انہیں اپنے ایکشن میں بہتری کے لیے مزید وقت درکار ہے۔نارائن نے اپنے ایکشن پر کام کیا تھا اور ابتدائی ٹیسٹ میں انکشاف ہوا تھا کہ ان کی تمام گیندیں 15 ڈگری کی مقررہ حد کے اندر ہیں لیکن اس کے باوجود انہوں نے ایونٹ سے دستبرداری کا اعلان کردیا۔ایک روزہ کرکٹ کے دس بہترین باؤلرز میں ایک اور اسپنر پاکستانی محمد حفیظ ہیں جو آٹھویں درجے پر موجود ہیں۔حفیظ کیراؤنڈ اور اوور دی وکٹ دونوں طرح سے گیندیں 15 ڈگری کی مقررہ حد تک متجاوز ہیں۔حفیظ باؤلنگ ایکشن کی جان کے لیے کیے گئے دو بائیو مکینک ٹیسٹ بھی کلیئر کرنے میں ناکام ہو گئے وہ ورلڈ کپ میں اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ نہیں کرسکیں گے۔