داعش نے شہری کو عمارت کی چھت سے نیچے پھینک دیاکیونکہ۔۔۔

داعش نے شہری کو عمارت کی چھت سے نیچے پھینک دیاکیونکہ۔۔۔
داعش نے شہری کو عمارت کی چھت سے نیچے پھینک دیاکیونکہ۔۔۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

دمشق (نیوز ڈیسک) داعش کے زیر قبضہ علاقے میں ایک اور شخص کو ہم جنسی پرستی کے الزام میں شہر کی بلند ترین عمارت کی چھت سے زمین پر پٹخنے کی سزا دے کر ہلاک کر دیا گیا ہے۔

بیجنگ میں سہہ ملکی وزرائے خارجہ ملاقات ، چین نے دہشتگردی ، ممبئی حملوں کیخلاف قراردادکی حمایت کی یقین دہانی کرادی:سشماسوراج
اخبار ”میل آن لائن“ کے مطابق یہ واقعہ شام کے شہر رقہ کے علاقہ الایاد میں پیش آیا جہاں اس شخص کو سات منزلہ عمارت کی چھت سے زمین پر پھینکا گیا۔ انسانی حقوق کی تنظیم ”سیرین آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس“ کے مطابق جب اس شخص کو زمین پر گرایا گیا تو گرنے کے نتیجے میں یہ شدید زخمی ہوا مگر ابھی زندہ تھا کہ ہجوم اس کے گرد جمع ہو گیا اور اس پر اینٹیں اور پتھر برسانا شروع کر دیئے جس کے نتیجہ میں وہ ہلاک ہو گیا۔
انٹرنیٹ ویب سائٹ Live Leak پر جاری ہونے والی تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ تقریباً 50 سالہ شخص کو عمارت کی چھت کے کنارے پر پلاسٹک کی سفید کرسی پر بٹھایا گیا ہے اور دو جنگجو اس کے دائیں بائیں کھڑے ہیں۔ ایک اور تصویر میں اس شخص کو گرتے ہوئے دکھایا گیا ہے جبکہ زمین پر پڑی اس کی لاش بھی دکھائی گئی ہے۔ داعش کی طرف سے ہم جنس پرستی کے الزام میں بلند ترین عمارت سے گرانے کی سزا اب تک متعدد مردوں کو دی جا چکی ہے۔ گزشتہ ماہ دو افراد کو ایک بلند عمارت سے گرایا گیا جبکہ دسمبر میں بھی ایک شخص کو اسی طرح ہلاک کیا گیا۔

مزید :

انسانی حقوق -