لاہورہائی کورٹ :دربار سخی سرور پردھماکہ کے مجرم خود کش بمبار صوفی بابا بہرام خان کی اپیل خارج ،54مرتبہ سزائے موت کنفرم

لاہورہائی کورٹ :دربار سخی سرور پردھماکہ کے مجرم خود کش بمبار صوفی بابا بہرام ...
لاہورہائی کورٹ :دربار سخی سرور پردھماکہ کے مجرم خود کش بمبار صوفی بابا بہرام خان کی اپیل خارج ،54مرتبہ سزائے موت کنفرم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے دربار سخی سرور پر خودکش دھماکے کے مرکزی مجرم کالعدم تحریک طالبان کے بہرام خان عرف صوفی بابا کی اپیل مسترد کرتے ہوئے اسے انسداد دہشت گردی کی متعلقہ عدالت سے 54بار ملنے والی سزائے موت کا حکم کنفرم کردیا۔عدالت عالیہ کے خصوصی ڈویژن بنچ نے گزشتہ روز ملزم بہرام خان کی اپیل خارج کرتے ہوئے قرار دیا کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت کے فیصلے میں ایسا کوئی قانونی سقم نہیں ہے جس کی بنیاد پر یہ اپیل منظور کی جاسکے ۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے مارچ 2013میں مجرم کو یہ سزائیں سنائی تھیں ،3اپریل2011کو ڈی جی خان فورٹ منرو روڈ پر واقعہ دربار سخی سرور میں خود کش دھماکہ ہوا جس میں 52افراد جاں بحق اور 76زخمی ہوئے تھے۔
ملزم بہرام خان عرف صوفی بابا دوسرا خودکش بمبار تھا جو خودکش جیکٹ نہ پھاڑ سکا اور موقع سے زخمی حالت میں گرفتار ہوا،مجرم بہرام خان نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی تھی جبکہ ٹرائل کورٹ کی طرف سے مجرم کی سزائے موت کی توثیق کے لئے عدالت عالیہ کو ریفرنس بھیجا گیا تھا ۔ہائی کورٹ نے مجرم کی اپیل خارج جبکہ ٹرائل کورٹ کی طرف سے بھیجا گیا ریفرنس منظو رکرلیا۔

مزید :

لاہور -