"پاکستان بناؤسرٹیفکیٹ" کا اجراء خوش آئند ، راوالپنڈی چیمبر

"پاکستان بناؤسرٹیفکیٹ" کا اجراء خوش آئند ، راوالپنڈی چیمبر

راولپنڈی (بیورورپورٹ)اوورسیز پاکستانیوں کے لیے "پاکستان بناؤسرٹیفکیٹ" کا اجراء خوش آئند ہے۔ سکیم سے پاکستان کو ادائیگیوں کے توازن اور زرمبادلہ کمانے اور ملکی معاشی ترقی میں ملے گی۔ راولپنڈی چیمبر آف کامرس کا دیرنیہ مطالبہ تھا کہ سمندر پار پاکستانیوں کو مراعات دی جائیں اور ایسی سکیمیں دی جائیں جس میں وہ آسانی کے ساتھ سرمایہ کاری کر سکیں۔ ان خیالات کا اظہار صدر چیمبر ملک شاہد سلیم نے مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب میں کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سالانہ ترسیلات کا حجم بیس ارب ڈالر کے قریب ہے۔ جو ہماری کل برآمدات کے اسی فی صد کے برابر ہے۔ اگر حکومت بنکنگ چینل ، ٹیکسوں اور ٖڈیوٹیز کی شرح میں کمی لائے تو اس کا حجم اگلے تین سال میں پینتیس ارب ڈالر تک بڑھایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سکیم شاندار ہے جس میں کم سے کم سرمایہ کاری کی حد پانچ ہزار ڈالر ہے اور منافع پر کوئی ٹیکس نہیں ہے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ بیرون ملک سفارت خانوں میں کمرشل قونصلرز کو فعال بنایا جائے۔ میرٹ پر تقرریاں کی جائیں اور اور سیز پاکستانیوں کے لیے قونصل خانوں میں مددگار ڈیسک لگائے جائیں۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ مستقبل میں مزید سکیمیں شروع کی جائیں گی۔ اس موقع پر سنیئر نائب صدر محمد بدر ہارون، نائب صدر فیاض قریشی، سابق صدر زاہد لطیف خان اور مجلس عاملہ کے اراکین موجود تھے۔

مزید : کامرس


loading...