روئی کے بھاؤ میں استحکام،کاروباری حجم میں کچھ حد تک اضافہ

روئی کے بھاؤ میں استحکام،کاروباری حجم میں کچھ حد تک اضافہ

کراچی(اکنامک رپورٹر) مقامی کاٹن مارکیٹ میں گزشتہ ہفتہ کے دوران ٹیکسٹائل و اسپننگ ملز کی جانب سے روئی کی محتاط خریداری اور جنرز کی جانب سے بھی اعلی کوالٹی کی روئی کے زیادہ بھاؤ طلب کرنے کی وجہ سے کاروباری حجم نسبتاً کم رہا۔روئی کے بھاؤمیں مجموعی طورپر استحکام رہا۔ صوبہ سندھ و پنجاب میں روئی کا بھاؤ فی من 7000تا8800روپے رہا جبکہ پھٹی کا بھاؤ فی40کلو3000تا3600روپے رہا۔بلوچستان میں روئی کا بھاؤ فی من 8000تا8200روپے جبکہ پھٹی کا بھاؤ3300تا3600روپے رہا گو کہ پھٹی انتہائی قلیل مقدار میں دستیاب ہے۔کراچی کاٹن ایسوسی ایشن کی اسپاٹ ریٹ کمیٹی نے اسپاٹ ریٹ فی من 8700 روپے کے بھاؤپر مستحکم رکھا۔کراچی کاٹن بروکرز فورم کے چیئرمین نسیم عثمان نے بتایا کہ ٹیکسٹائل ملز کے بڑے گروپوں نے بیرون ممالک سے روئی کی تقریباً30لاکھ گانٹھوں کے درآمدی معاہدے کرلئے ہیں جس کی وجہ سے مقامی کاٹن میں کم دلچسپی لے رہے ہیں حکومت نے بیرون ممالک سے روئی کی درآمد کی پہلی فروری سے 30جون تک اجازت دی ہے۔گزشتہ جمعہ کوایف بی آرکی جانب سے ایس آراوبھی جاری کردیاگیا ہے۔

بین الاقوامی کاٹن مارکیٹوں میں روئی کے بھاؤ میں مجموعی طورپر ملا جلا رجحان رہا۔

مزید : کامرس


loading...