مرکزی جنرل سیکرٹری بلوچستان نیشنل پارٹی سینیٹر ڈاکٹر جہانزیب کا ڈیرہ غازیخان کادورہ

مرکزی جنرل سیکرٹری بلوچستان نیشنل پارٹی سینیٹر ڈاکٹر جہانزیب کا ڈیرہ ...

ڈیرہ غازیخان(نمائندہ خصوصی ) بلوچستان نیشنل پارٹی مرکزی سیکرٹری جنرل سینیٹر ڈاکٹر جہانزیب جمالدینی نے ڈی جی خان کا تنظیمی دورہ۔(بقیہ نمبر53صفحہ12پر )

بلوچ قبائل کے رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں ان کے ہمراہ مرکزی رہنما کا کا بزدار ،مرکزی پروفیشنل سیکرٹری ڈاکٹر عبدالغفور بلوچ ،مرکزی سیکرٹری منظور بلوچ ،مرکزی چیئرمین بلوچ سٹوڈنٹ آرگنائزیشن نظیر بلوچ ،مرکزی کمیٹی ممبر سردار حق نواز بزدار بھی ہمراہ تھے اس موقع پر سینیٹر ڈاکٹر جہانزیب جمالدینی نے پریس کانفرنس کے دوران موجودہ ملکی حالات اور سیاسی صوررتحال پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جمہوری نظام کو ختم کرنے اور ایک دوسرے کو نیچا دکھانے کی کوشش کی جارہی ہے ملکی بقا کے لیے سیاست میں شرافت اور برداشت کو دوام دیا جائے ہم سب کو ملکر جمہوری اداروں کی بالادستی کے لیے کام کرنا چاہیے۔اور تمام سیاسی جماعتیں پاکستان کو ویلفیئر اسٹیٹ پر کام کریں انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی جنوبی پنجاب کی مخالفت نہیں کرتی لیکن ڈی جی خان سے روجھان کو بلوچستان میں شامل کیا جائے اور اس میں ڈی جی خان کے عوام کی رائے کو لازمی شامل کیا جائے.ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سی پیک کا بلوچستان کو ابھی کوئی فائدہ نہیں اصل علاقہ گوادر ہے جو کہ سی پیک کا سنٹر ہے گودار کی بنیادی ضروریات پوری کی جاتیں، ہنر مند افراد پیدا کرنے کے لیے یونیورسٹی قائم کی جاتیں تاکہ ھمارے علاقے کے زیادہ سے زیادہ لوگ ہنر حاصل کے کے اس پروجیکٹ کے مختلف حصوں میں کام کرکے روزگار حاصل کر پاتے مگر ایسا نہیں کیا گیا سی پیک ایک روٹ ہے کوریڈور ہے جب کوریڈور کو استعمال ہی نہیں کیا جاتا آخری حصہ کو استعمال کیا جاتا ہے تو کوئی فائدہ نہیں ھماری پارٹی سمیت من الحص القوم ھمارا مطالبہ تھا کہ قانون سازی کی جائے یہاں پر جو بھی کاربار کرنے آتاہے اس کو شناختی کارڈ نہ دیا جائے ووٹ ڈالنے کا حق نہ ہوسینٹ سے بل پاس کرا لیا ہے اب قومی اسمبلی سے پاس کرانا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...