ایران میں اسلامی انقلاب کی تقریبات شروع امریکی پابندیایوں کے چرچے

ایران میں اسلامی انقلاب کی تقریبات شروع امریکی پابندیایوں کے چرچے

تہران (این این آئی)ایران میں اسلامی انقلاب کی چالیسویں سالگرہ کی تقریبات کئی شہروں میں شروع ہو گئیں، تقریبات کا یہ سلسلہ اگلے دس ایام تک جاری رہے گا اور سرکاری اور نجی(بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

عمارتوں پر ایرانی پرچم لہراتے رہیں گے، دوسری جانب سماجی رابطوں کی ویب سائیٹس پر ایرانی انقلاب کے چالیس سال کی تکمیل کے موقع پر تبصرے اور تصاویر شیئر کی جا رہی ہیں جن میں ایرانی رجیم کی وجہ سے ایرانی قوم کو درپیش مشکلات، بحران اور ایران کے سرکاری اور قومی وسائل کا بیرون ملک فوجی مہم جوئی پر استعمال کی تفصیلات شامل ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق آیت اللہ خمینی کی آمد کے موقع پر ہفتہ کو صبح نو بج کر تینتیس منٹ پر سارے ملک میں سائرن بجائے گئے۔ ایران میں انقلاب کی تقریبات کا آغاز پہلی فروری سے ہوتا ہے۔ سن 1979 میں اسی دن آیت اللہ خمینی چودہ سالہ جلاوطنی ختم کرتے ہوئے فرانس سے ایک چارٹرڈ طیارے کے ذریعے تہران کے مہرآباد ہوائی اڈے پر پہنچنے تھے۔ سن 1979 میں اسلامی انقلاب نے ایران میں ڈھائی ہزار سالہ پرانی بادشاہت کو ختم کر کے سخت عقیدے کی شیعہ حکومت کے قیام کی راہ ہموار کی تھی۔۔ دوسری جانب سماجی رابطوں کی ویب سائیٹس پر ایرانی انقلاب کے چالیس سال کی تکمیل کے موقع پر تبصرے اور تصاویر شیئر کی جا رہی ہیں جن میں ایرانی رجیم کی وجہ سے ایرانی قوم کو درپیش مشکلات، بحران اور ایران کے سرکاری اور قومی وسائل کا بیرون ملک فوجی مہم جوئی پر استعمال کی تفصیلات شامل ہیں۔رواں سال کے دوران امریکا کو توقع ہے کہ ماضی کے برعکس ایران میں حکومت کے خلاف عوام کے احتجاج میں زیادہ شدت آئے گی۔ اس کے ساتھ ساتھ امریکا اپنے حلیف ممالک کے ساتھ ملک کر ایران پر معاشی دباؤ بڑھانے کی مہم جاری رکھے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...