شان نے پریشانی میں مبتلا فنکاروں کو مشورے دینے شروع کردئے

شان نے پریشانی میں مبتلا فنکاروں کو مشورے دینے شروع کردئے
شان نے پریشانی میں مبتلا فنکاروں کو مشورے دینے شروع کردئے

  


لاہور(فلم رپورٹر)شوبزانڈسٹری میں یوں تو ذہنی صحت اور ذہنی مسائل پر کم ہی بات کی جاتی ہے، مگر کچھ دن قبل نوجوان اداکار اور ڈی جے محسن عباس حیدر کی جانب سے پہلی بار ڈپریشن کا ااعترفکیا گیا۔محسن عباس حیدر کی جانب سے ڈپریشن کے اعتراف کے بعد اب شان شاہد نے بھی اس اہم ترین مسئلے پر بات کی ہے اور اس کے اداکاروں پر ہونے والے اثرات کو بھی بیان کیا ہے۔شان شاہد نے اپنی سوشل میڈیا پوسٹ میں ڈپریشن کے اداکاری پر اثرات پر بات کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ اس کا شکار ہونے والے اداکاروں اور فنکاروں کو اسے بطور آلہ استعمال کرنا چاہیے۔ شان شاہد نے لکھا کہ ان کے خیال میں اداکار کو ڈپریشن کو بہترین اداکاری کے آلے پر استعمال کرکے شاندار اداکاری کرکے لوگوں کے دل جیتنے چاہیے۔انہوں نے مثال دی کہ جس طرح عظیم مصور وان گوگ کے درد کو ان کی بنائی گئی پینٹنگز میں محسوس کیا جا سکتا ہے، اسی طرح ڈپریشن کے شکار اداکار کی اداکاری کو بھی سکرین پر دیکھا جانا چاہیے۔ساتھ ہی شان شاہد نے کہا کہ ایک اداکار کی شخصیت میں ڈھیر سارے کردار ہوتے ہیں اور وہ ہر طرح کے کردار کو ایک الگ انداز اور جذبات کے ذریعے بیان کرنے کی کوشش کرتا ہے اور اگر وہی اداکار ڈپریشن کو بھی اپنی اداکاری میں شامل کرلے تو وہ مزید شاندار اداکاری کر سکتا ہے۔سپر اسٹار کا کہنا تھا کہ بد قسمتی سے کچھ اداکار ڈپریشن کے عادی ہوجاتے ہیں اور وہ درد کو برداشت کرتے رہتے ہیں۔ساتھ ہی شان شاہد نے کہا کہ آرٹسٹوں کو چاہیے کہ ڈپریشن کو آلے کے طور پر استعمال کرکے اس عادت کو شکست دیں اور اپنے اہداف کو بہترین انداز میں حاصل کریں۔ساتھ ہی شان شاہد نے کہا کہ دنیا اور مداح شوبز انڈسٹری کا روشن اور کھل کھلاتا چہرہ دیکھنے کے خواہاں ہیں، انہیں انڈسٹری کا سیاہ یا دردناک چہرہ نہیں دکھانا چاہیے۔

مزید : کلچر


loading...