پیراگون ہاؤسنگ سکینڈل ،خواجہ برادران 14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

پیراگون ہاؤسنگ سکینڈل ،خواجہ برادران 14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے پیراگون ہاؤسنگ سکینڈل میں ملوث خواجہ برادران کو14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پرجیل بھجوادیاہے ،گزشتہ روز 7روز ہ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پرخواجہ برادران کواحتساب عدالت کے جج نجم الحسن کی عدالت میں پیش کیاگیا،نیب پراسیکیوٹر وارث جنجوعہ نے عدالت کوبتایا پیراگون سکینڈل میں مزید تفتیش جاری ہے جس کیلئے15روز کا جسمانی ریمانڈ درکار ہے ،خواجہ برادران کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ تمام بینک ٹرانزیکشنزکا ریکارڈ نیب کو فراہم کر چکے ہیں،نیب کے پاس کوئی ٹھوس شواہد موجود نہیں ، بے بنیاد مقدمہ میں ملوث کیا جا رہا ہے ، وکیل نے استدعا کی کہ نیب کی ریمانڈ کی استدعا مسترد کی جائے۔عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد نیب کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ملزمان کو14 روز کے جوڈیشل ریمانڈ پرجیل بھجوادیاہے۔خواجہ برادران کو احتساب عدالت پیشی کے موقع پرسکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے،لیگی کارکنان کی قائدین کے ساتھ اظہاریکجہتی کیلئے احتساب عدالت جانے کی کوشش پولیس اہلکاروں نے ناکام بنادی،سکیورٹی کے پیش نظر ایم اے اوکالج سے سول سیکرٹریٹ تک تمام راستے کنٹینرز اور خاردار تاریں لگا کر بند کر دیئے گئے تھے۔علاوہ ازیں خواحہ سعد رفیق نے احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ میرے پروڈکشن آرڈر کے معاملے پر عمران خان پرسنل ہوچکے ہیں اوروہ سپیکر قومی اسمبلی پر پریشر ڈال رہے ہیں ،میری پارٹی مجھے پی اے سی کا ممبر نامزد کر چکی ہے لیکن سپیکر صاحب کاغذات اپنے پاس رکھ کے بیٹھے ہیں اورفیصلہ نہیں کر پا رہے ،یہ پارلیمنٹ اور جمہوریت کی توہین ہے ،تین بار وزیر اعظم رہنے والے قومی لیڈر کو جیل میں ڈالا ہوا ہے ،ان کا علاج تک نہیں کرایا جا رہا ،میاں نواز شریف کا قصور یہ ہے کہ ملک میں سی پیک لے کر آئے ،کل بھی کہتا تھا آج بھی کہتا ہوں پاناما ایک سازش تھی جس کا مقصد ملک میں افرتری پیدا کرنا تھا۔ہمارا بار بار غیر قانونی طور پر جسمانی ریمانڈ دیا گیا ،نیب کے پاس ہمارے خلاف کوئی شواہد نہیں تھے ،نواز شریف بھی سی پیک ملک میں لانے کی سزا کاٹ رہے ہیں،ہمارا پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی سے متعلقہ کوئی بینک اکاؤنٹس نہیں ہے ،کوئی ٹرانزیکشن بھی نہیں ہے پھر بھی حراست میں رکھا گیا ،قانون اور آئین کی سر بلندی کی بات کرنے کی سزا ملی ہے ۔

خواجہ برادران

مزید : صفحہ اول


loading...