میوہ شاہ گدی نشینی کیس ،مدعا علیہان کو پیش ہونے کی آخری مہلت

میوہ شاہ گدی نشینی کیس ،مدعا علیہان کو پیش ہونے کی آخری مہلت

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) سینئر سول جج محمد سلیمان کی عدالت نے میوہ شاہ کراچی کی گدی نشینی سے متعلق کیس میں مدعاعلیہان کی مسلسل غیر حاضری پر آخری مہلت دیتے ہوئے حکم دیا ہے کہ 9 فروری بہر صورت پیش ہوں۔درخواست گزار ریاض الحسن شاہ نے اپنے وکیل ڈاکٹر فیاض شاہ ایڈووکیٹ کے توسط سے موقف اختیار کیا ہے کہ میوہ شاہ کراچی کے بابا ذہین شاہ باجی دنیا فانی سے رخصت ہونے سے قبل وصیت نامے میں اپنے داماد و درخواست گزار ریاض الحسن شاہ کو گدی نشیں نامزد کیا جس کا تمام تر ریکارڈ متعلقہ ڈپٹی کمشنر اور خود بابا ذہین شاہ باجی کے پاس موجود تھا تاہم مزار میوہ شاہ میں عقیدت مندوں کی جانب سے پیش کیئے جانے والے نذرانے بٹورنے اور سستی شہرت حاصل کرنے سمیت بدنیتی سے مزار کے ملازم محمد عاطف نے بابا ذہین شاہ باجی کا وصیت نامہ چوری کر لیا اور ان کے وصال کے بعد جھوٹا وصیت نامہ تیار کرکے گدی نشیں بن کر مزار پر قبضہ کرلیا ہے لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ مدعاعلیہان سے اصل وصیت نامہ طلب کرکے مزار سے غیر قانونی قبضہ ختم کرایا جائے تاکہ مزار پر اصل گدی نشین اپنی خدمات کے زریعے مزار پر آنے والے زائرین دینی تعلیمات کی روشنی میں درست رہنمائی کی جاسکے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...