نومولود بچی نے اپنی والدہ کے جسم میں کینسر کی موجودگی کی نشاندہی کردی، انتہائی حیران کن واقعہ

نومولود بچی نے اپنی والدہ کے جسم میں کینسر کی موجودگی کی نشاندہی کردی، ...
نومولود بچی نے اپنی والدہ کے جسم میں کینسر کی موجودگی کی نشاندہی کردی، انتہائی حیران کن واقعہ

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)برطانیہ میں ایک نومولود نے اپنی ماں میں کینسر کی تشخیص کرکے اس کی جان بچا لی، مگر چند ماہ کی بچی یہ کیسے کر سکتا ہے؟ کہانی سن کر آپ کی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی۔ میل آن لائن کے مطابق 40سالہ کلیئری گرانوائیل نامی خاتون، جو پیشے کے اعتبار سے نرس ہے، کا کہنا ہے کہ میری دودھ پیتی بچی نے میری جان بچا لی ورنہ میرا کینسر بگڑ گیا ہوتا اور میں موت کے منہ میں چلی جاتی۔ کلیئری نے بتایا کہ ”بچی میرا دودھ پیتی تھی، اچانک ایک روز اس نے دودھ پینا چھوڑ دیا، جس پر میں بہت حیران ہوئی۔ جب میں نے اس حوالے سے ڈاکٹر سے مشورہ کیا تو اس نے کچھ ٹیسٹ کرانے کو کہا۔ جب میں نے ٹیسٹ کرائے تو مجھ میں چھاتی کے کینسر کی تشخیص ہو گئی۔“

کلیئری کا کہنا تھا کہ ”میں دائیں چھاتی کینسر سے متاثر تھی اور مجھے اس کا علم نہیں تھا۔ تاہم میری بچی کی وجہ سے بروقت تشخیص وہ گئی اوراب میں علاج کے بعد بہت حد تک صحت مند ہو چکی ہوں۔ میں آج بھی اس بات پر حیران ہوتی ہوں کہ میری بیٹی کومیرے جسم میں کینسر کی موجودگی کا ادراک ہو گیا اور اس نے دودھ پینا چھوڑ دیا۔ میں نے اسے دودھ پلانے کی بہت کوشش کی لیکن اس کے بعد سے اس نے منہ تک نہیں لگایا بلکہ رونا شروع کر دیتی تھی۔ اس صورتحال پر مجھے یہ احساس تو ہوا کہ کچھ غلط ہے لیکن میں یہ سوچ بھی نہیں سکتی تھی کہ مجھے کینسر لاحق ہو چکا ہے۔ “

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ