مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد، کشمیری سراپا احتجاج، وادی میں مکمل ہڑتال،حریت قیادت نظر بند، وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل

مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد، کشمیری سراپا احتجاج، وادی میں مکمل ہڑتال،حریت ...
مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد، کشمیری سراپا احتجاج، وادی میں مکمل ہڑتال،حریت قیادت نظر بند، وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل

  


سرینگر (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد پر کشمیری عوام نے احتجاج کرتے ہوئے وادی میں مکمل ہڑتال کی اور کہا کہ مودی حکومت کے 5 سال مقبوضہ کشمیر میں ظلم کے پہاڑ توڑے گئے ، مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد پہلے ہی وادی کو فوجی چھاونی میں بدل دیا گیا اور کٹھ پتلی انتظامیہ نے احتجاج کے خوف سے سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور یاسین ملک سمیت حریت قیادت کو گھروں میں نظر بند  کر دیا ، کشمیریوں کی ان کے اپنے شہروں میں ہی اجنبیوں کی طرح تلاشی لی گئی۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق نریندر مودی کے دورے سے پہلے ہی وادی کو فوجی چھاونی میں بدل دیا گیا اور کٹھ پتلی انتظامیہ نے احتجاج کے خوف سے حریت رہنماؤں کو گھروں میں نظر بند کردیا گیا ہے ۔بنی ہال سے بارہ مولا تک ٹرین سروس بھی معطل کردی گئی جب کہ سینکڑوں موٹر سائیکلیں دستاویزات ہونے کے باوجود ضبط کرلی گئیں۔قابض انتظامیہ نے کانفرنس سینٹر کے اطراف شہریوں کا آزادانہ سفر ناممکن بنا دیا ۔شیر کشمیر انٹرنیشنل کانفرنس سینٹر کو جانے والے راستوں پر ٹریفک پر پابندی لگادی جب کہ راستوں پر فوجی اور پولیس دستے بھی تعینات کردیے گئے ہیں۔نریندر مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد پر وادی میں مکمل ہڑتال رہی جو مقبوضہ کشمیر کی متحدہ مزاحمتی تحریک کی اپیل پر کی گئی ۔کشمیری قیادت کا کہنا ہے کہ مودی حکومت کے 5 سال مقبوضہ کشمیر میں ظلم کے پہاڑ توڑے گئے ہیں۔ مریضوں کو ہسپتال جانے سے بھی روکا گیا ۔کشمیریوں کی ان کے اپنے شہروں میں ہی اجنبیوں کی طرح تلاشی لی گئی ۔ قابض فوج نے سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق  اور یاسین ملک سمیت کئی حریت رہنماؤں کو نظربند کر دیا۔حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے مودی کے دورہ مقبوضہ کشمیر کے موقع پر اپنے شوہر سمیت حریت قیادت کو گھروں میں نظر بند کرنے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہدنیا کا سب سے بڑا مارشل کا مقبوضہ کشمیر میں ہے ، نریندر مودی کے دورے پر مقبوضہ کشمیر مفلوج کر دیا گیا،لوگ گھروں میں بند ہیں اور مقبوضہ  کشمیر میں سانپ سونگھ گیا ہے، مقبوضہ کشمیر میں حریت کی تمام قیادت کو نظر بند کر دیا گیا ہے،مودی کی سیکیورٹی کے لیے شارپ شوٹر تعینات کر دیئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارت انسانی حقوق اور جمہوریت کا سب سے بڑا دشمن ہے ،ہندوستان ہمارا خون اور پانی چوس رہا ہے،بھارت نہ صرف آزادی کا حق چھین رہا،قدرتی وسائل بھی لوٹ رہا ہے۔

دوسری طرف بھارتی نجی ٹی وی کے مطابق ہندوستانی وزیر اعظم نریندرا مودی نے لداخ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی لداخ میں ترقی کو یقینی بنانے کے لئے کوئی کسر باقی نہیں چھوڑے گی،سردیوں کے موسم میں زمینی راستے سے بیرون دنیا کے ساتھ کٹ کر رہ جانے والے اس خطے کو موسمی رابطے فراہم کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

مزید : قومی


loading...