حکومت فاٹا اصلاحات فوری طور پر نافذ کرے، طالبان کو مذاکرات کی میزپر لانے کا سہرا عسکری قیادت کے سرہے:آفتاب شیرپاؤ 

حکومت فاٹا اصلاحات فوری طور پر نافذ کرے، طالبان کو مذاکرات کی میزپر لانے کا ...
حکومت فاٹا اصلاحات فوری طور پر نافذ کرے، طالبان کو مذاکرات کی میزپر لانے کا سہرا عسکری قیادت کے سرہے:آفتاب شیرپاؤ 

  


پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی وطن پارٹی کے چیئرمین اور سابق وزیر داخلہ  آفتاب احمد خان شیرپاؤنے کہا ہے کہ طالبان کو مذاکرات کی میزپر لانے کا سہرا عسکری قیادت کے سرہے، تحریک انصاف کی حکومت فوری طور پر  فاٹا اصلاحات من و عن نافذ کرے،فاٹا انضمام کے عمل کو تیز تر کرنے کی ضرورت ہے تاکہ وہاں پر بسنے والے لوگوں کو انصاف کی فراہمی اور ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کی راہ ہموار ہو سکے۔

پشاور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آفتاب شیر پاؤ کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہیے کہ قبائلی اضلاع کی ترقی اور وہاں پر عدالتی اور پولیس انفراسٹرکچر کا قیام ناگزیر ہے تاکہ عوام کو انصاف کی فراہمی کے ساتھ ساتھ امن و امان کا قیام ممکن ہو سکے۔انھوں نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ جلد از جلد فاٹا میں ریگولر کورٹس کے قیام کے عمل کو پایہ تکمیل تک پہنچائے کیونکہ قبائلی عوام عرصہ دراز سے انصاف کی فراہمی کے منتظر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ  طالبان کو مذاکرات کی میزپر لانے کا سہرا عسکری قیادت کے سرہے، جبکہ چین سعودی عرب اور دیگر ممالک سے مالیاتی پیکج کا حصول آرمی چیف کی کاؤشوں کا نتیجہ ہے۔انہوں نے کہا کہ افغانستان میں قیام امن کا سب سے زیادہ فائدہ پاکستان کو ہو گاکیونکہ امن کے قیام کے بعد اسلام آباد کو وسطحی ایشیائی ریاستوں تک تجارت اور توانائی کے منصوبوں کی تکمیل کیلئے رسائی مل جائے گی،افغانستان میں قیام امن کے لئے تمام فریق اس سنہری موقع کو مت گنوائیں کیونکہ ایسا موقع گنوانا غیر دانشمندی ہو گا ۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور


loading...