پاکستانیوں کو دوزخم لگ چکے ، تیسرا زخم لگا تو سب کچھ ختم ہوجائیگا :حسن نثار کا احتساب کے حوالے سے دل دہلا دینے والا تجزیہ

پاکستانیوں کو دوزخم لگ چکے ، تیسرا زخم لگا تو سب کچھ ختم ہوجائیگا :حسن نثار کا ...
پاکستانیوں کو دوزخم لگ چکے ، تیسرا زخم لگا تو سب کچھ ختم ہوجائیگا :حسن نثار کا احتساب کے حوالے سے دل دہلا دینے والا تجزیہ

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار حسن نثار نے کہاہے کہ عوام کو سقوط ڈھاکہ اور بھٹو کو پھانسی دینے کی صورت میں دو زخم لگ چکے ہیں، اب احتساب میں سے کچھ نہ نکلنے کا تیسرا زخم لگا تو سب کچھ ختم ہوجائیگا ۔

جیونیوز کے پروگرام ”میرے مطابق “ میں گفتگو کرتے ہوئے حسن نثار نے کہا کہ اگر احتساب میں سے کچھ نہ نکلا تو اس ملک میں سب کچھ ختم ہوجائیگا ، پاکستانیوں کی اجتماعی نفسیات پر دو بہت خوفناک زخم لگے ہیں جن میں ایک سکوت ڈھاکہ تھا ، قوم وہ زخم بھولی نہیں ہے ، اس وقت قوم کو ملک کے کرتادھرتاﺅں کی زبان سے اعتبار اٹھ گیا تھا ، دوسرا زخم بھٹو کی پھانسی تھی ، بھٹو کی پھانسی نے لوگوں کا ایمان متزلزل کردیا جو بھٹو سے نفرت کرتے تھے ، ان کے ذہن میں بھی چلا گیا کہ اس ملک میں قانون کی حکمرانی کا کوئی تصورنہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اب اگر احتساب میں سے بھی کچھ نہ نکلا تو یہ تیسرا زخم ہوگا ، 22کروڑ لوگوں کو ان تیسرے زخم سے بچایا جایا بصورت دیگر اداروں سے ایمان اٹھ جائے گا ۔

ان کا کہنا تھا کہہ ہماری اوقات تونہیں کہ ہم فاروق اعظم ؓکے نقش قدم پرچل سکیں لیکن اتنا تو ہوناچاہئے کہ کوئی اس بدو جیساہے بن جائے جس نے حضرت عمر ؓ سے پوچھا تھا کہ آپ کے پاس اضافی کپڑا کیسے آیا؟ ہم تو وہ بدو بھی نہیں بن سکے جو حکمرانوں کے گریبان پر ہاتھ ڈال سکیں ، اگر چمچوں کھڑچوں نے پہلے ہی نواز شریف کاہاتھ پکڑ لیا ہوتا کہ ”میاں صاحب بس“ تو آج ان کے یہ حالات نہ ہوتے ، حکمرانوں کوکس کر رکھنا چاہئے تاکہ وہ بدو ہی بن جائیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام پتنگیں اڑانے سے ہی زندہ دل نہیں ہوتے ، عوام زندہ دل اس وقت ہوتے ہیں جب تگڑے ہوں ، اگر عوام تگڑے ہوں تو پھر کسی احتساب بیورو کی ضرورت نہیں رہتی ، میں احتساب بیورو کو گالی سمجھتا ہوں۔

حسن نثار کا کہنا تھاوزیراعلیٰ عثمان بزدار ”جم جم “سیکھیں لیکن پاکستان کے سب سے بڑے صوبے کی قیمت پر نہ سکھیں، پنجا ب پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہے ، عثمان بزدار اس کی قیمت پر نہ سیکھیں، یہ بات ایسے ہی ہے جیسے کو ئی سپورٹس کار میں بیٹھ کر انارکلی میں سیکھنا شروع کردے ، وہ سیکھیں ضرور لیکن کہیں اور جا کر سیکھیں ، ہمارے صوبے کی قیمت پرنہ سکھیں۔

مزید : قومی


loading...