ملکی قرضوں میں 40 فیصد تک اضافہ بدترین طرز حکمرانی،نیر بخاری

      ملکی قرضوں میں 40 فیصد تک اضافہ بدترین طرز حکمرانی،نیر بخاری

  



اسلام آباد (این این آئی)سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی سید نیر حسین بخاری نے کاناقص حکومتی کارکردگی پر کہاہے کہ بدترین طرز حکمرانی کی کھلی حقیقت ہے کہ مجموعی قرض اور واجبات میں 40فی صد اضافہ ہو گیا ہے۔ ایک بیان میں نیر بخاری نے کہاکہ ملک پر 402 کھرب 23ارب 30کروڑ روپے کا بوجھ ہے،نااہلیت کا ثبوت ہے کہ یہ اضافہ بڑے پیمانے پر قرضوں کے حصول کی طے شدہ حدسے تجاوز ہے۔ انہورں نے کہاکہ غیر جمہوری سوچ کیوجہ سے پارلیمنٹ بے توقیر اور صدرہاؤس آرڈیننس فیکٹری ہ، مانگے تانگے کی سواریاں ایک دوسرے پر سوتن اور سوتیلے پن کی طعنہ زن ہیں۔تنگ عوام ذمہ داران حکومت کے علامتی جنازے پڑھا رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مافیاز گٹھ جوڑ ایسا ہے کہ وزیراعظم آٹا چینی چوروں کو انکوئری کمیٹیوں کی سربراہی دیتے ہیں۔بینظیر اِنکم سپورٹ پروگرام سے محترمہ کی تصویر بٹانا چھو ٹی سوچ ہے۔

نیر بخاری

مزید : صفحہ آخر