پی ٹی آئی حکومت قرضہ گروپ، کابینہ نااہل، سب پیسہ بنا رہے ہیں: مسلم لیگ (ن)

  پی ٹی آئی حکومت قرضہ گروپ، کابینہ نااہل، سب پیسہ بنا رہے ہیں: مسلم لیگ (ن)

  



اسلام آباد(آئی این پی) مسلم لیگ(ن) نے موجودہ حکومت کو قرضہ گروپ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مہنگائی پر حکومت کا کوئی کنٹرول نہیں ہے، آٹا 20روپے کلو مہنگا ہوا، 40ارب روپیہ عوام کی جیبوں سے گیاہے وہ کس کی جیب میں گیا ہے؟، ہر مہینے مہنگائی بڑھ رہی ہے، ہر چیز میں پیسے بن رہے ہیں،وفاق میں عمران خان، پنجاب میں عثمان بزدار اور خیبر پختونخوا میں عثمان بزدار پلس ہیں، 400 بلین کے قریب ریونیو شارٹ فال ہو چکا ہے،گورننس، پلاننگ کا سنجیدہ مسئلہ ہے، ایک وزیر کہہ رہا ہے آٹے کی کوئی کمی نہیں دوسرا کہہ رہا ہے ہم درآمد کر رہے ہیں، عمران خان مافیا کے خلاف آپریشن کیوں نہیں کرتے، مافیا کی نشاندہی کریں اور ایکشن لیں، ڈی چوک میں کھڑے ہو کر تقریر کرنے سے کرپشن ختم نہیں ہوتی، کابینہ میں اہلیت ہی نہیں ہے،گندم کی درآمد کا فیصلہ جہانگیر ترین سنا رہا ہے، پہلے برآمد کرتے وقت پیسہ بنایا گیا اب درآمد پر پیسہ بنایا جائے گا۔اتوار کو نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے مسلم لیگ(ن) کے رہنماء اور سابق گورنر سندھ محمد زبیر عمر نے کہا کہ ہم نیب کا درجنوں کیسز میں مقابلہ کر رہے ہیں، سب سرخرو ہو کر نکل رہے ہیں۔ مہنگائی کے اعداد وشمار جو جاری کئے گئے ہیں پندرہ فیصد مہنگائی ہے، ن لیگ چار فیصد سے کم پر چھوڑ کر گئی تھی، ہرمہینے ٹرینڈبڑھتا چلاجارہا ہے۔ گندم کی درآمد کا فیصلہ جہانگیر ترین سنا رہا ہے، اسکو کیسے پتہ تھا؟کون شوگر انڈسٹری کو کنٹرول کرتے ہیں، جہانگیر ترین، اور خسرو بختیار فیصلے بھی کرتے ہیں اور اعلان بھی کرتے ہیں، کابینہ میں اہلیت ہی نہیں ہے، سوچ ہی نہیں ہے، پروفیشنلزم ہی نہیں ہے۔ محمد زبیر عمر نے کہا کہ یہ قرضہ گروپ ہے، 11 ہزار ارب قرضہ لیا گیا ہے، آئی ایم ایف کی ٹیم لا کر بٹھائی گئی ہے۔ حکومت کو ایسی پالیسیاں بنانی ہوتی ہیں جس سے فیکٹریاں کھلیں،بند نہ ہوں۔ سنا ہے منی بجٹ لے کر آرہے ہیں۔عاطف خان یا دوسرے لوگوں نے جو الزامات لگائے کیا وہ ختم ہوگئے؟۔انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت آئی تو چیلنجز تھے لیکن ہم نے رونا دھونا نہیں کیا تھا،ہر حکومت کو چیلنجز ملتے ہیں، ن لیگ کی لیڈرشپ کی ذمہ داری ہے کہ عوام کولیڈ کرے اور مشکل سے نکالے اور ہم عوام کو مشکل سے نکالیں گے۔

ن لیگ

مزید : صفحہ آخر