شام، مغربی حلب میں گھمسان کی جنگ، 40باغی ہلاک، فوج نے مزید کئی شہر باغیوں سے چھین لئے

شام، مغربی حلب میں گھمسان کی جنگ، 40باغی ہلاک، فوج نے مزید کئی شہر باغیوں سے ...

  



دمشق(اے پی پی) شام کی فوج نے خان طومان کی آزادی اور اس پر اپنے کنٹرول کو مضبوط کرتے ہوئے مزید دیہات کو دہشت گردوں کے چنگل سے آزاد کرا لیا ہے اور جنوب مغربی صوبے حلب کی جانب اپنی پیشرفت کا سلسلہ جاری رکھا ہے۔ المیادین کے مطابق شامی فوج نے صوبہ کے جنوب مغربی علاقے میں واقع الحمیرہ کو دہشت گردوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا۔شامی فوج نے اسی طرح جنوب مغربی حلب میں اپنے زیر کنٹرول علاقوں میں اپنی پوزیشن مضبوط کیا اور دہشت گردوں کے قبضے والے علاقوں پر شدید حملے جاری رکھے ہوئے ہے۔ ان علاقوں پرداعش دیگر دہشت گرد گروہوں کا قبضہ ہے۔شام کی فوج نے مشرقی حلب کے تادف-الباب علاقے پر دہشت گردوں کا حملہ ناکام بنا دیا۔ شامی فوج نے اس کاروائی میں توپخانوں اور میزائلوں کا استعمال کیا۔ اس دوران تقریبا 40 جنگجو بھی اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے جن میں 29 کا تعلق اپوزیشن گروپوں سے ہے۔ادھرسخت گیر جنگجو گروپ ہیئت تحریرالشام نے ان دونوں خودکش بم حملوں کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

ادھر حلب سے قریباً پچاس کلومیٹر شمال مشرق میں واقع شہر الباب کے نزدیک ترکی کے حمایت شامی جنگجوؤں نے حکومت کے ٹھکانوں پر حملہ کیا لیکن اس حوالے سے مزید کوئی تفصیلات سامنے نہیں آئی ہیں۔شامی فوج کی باغیوں کے خلاف اس نئی کارروائی کے نتیجے میں مزید ہزاروں افراد بے گھر ہوگئے۔ وہ اپنا گھربار چھوڑ کر ترکی کے سرحدی علاقے کی جانب جارہے ہیں۔ادلب کے مشرق اور جنوب مشرق میں بھی فریقین کے درمیان شدید جھڑپیں جاری رہیں شام کی سرکاری خبررساں ایجنسی کے مطابق فوجیوں نے بارود سے بھری چار کاروں کو ان کے ہدف پر پہنچنے سے پہلے دھماکوں سے اڑا دیا اورانھیں ناکارہ کردیا۔شامی فوج نے جمعیت الزہرا کے محاذ پر باغی جنگجوؤں پرراکٹ برسائے اور توپ خانے سے گولہ باری کی۔ باغی جنگجوؤں نے بھی جواب میں حلب کے رہائشی علاقوں کی جانب راکٹ برسائے۔المرصد کے مطابق جھڑپوں کے دوران روسی طیاروں نے خان العسل، المنصورہ، کفر حمرہ، خان طومان، الفوج 46 اور اورم الکبری کے علاقوں میں شدید بم باری کی۔ادلب کے مشرق اور جنوب مشرق میں بھی فریقین کے درمیان شدید جھڑپیں جاری رہیں

مزید : علاقائی