کینیا، پہلی پاکستان افریقہ تجارتی کانفرنس خوش آئند، کار پوریٹ ایسو سی ایشن

 کینیا، پہلی پاکستان افریقہ تجارتی کانفرنس خوش آئند، کار پوریٹ ایسو سی ایشن

  



لاہور(این این آئی)پاکستان کارپٹ مینوفیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین محمد اسلم طاہر نے کینیا میں منعقدہ پہلی پاکستان افریقہ تجارتی کانفرنس کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ برآمدات میں اضافے کیلئے اس طرز کی سر گرمیاں بڑھانے کی اشدضرورت ہے،پاکستانی مصنوعات کی سوشل میڈیا کے ذریعے تشہیر کیلئے حکومتی سرپرستی میں الگ شعبہ قائم کر کے اس میں پرائیویٹ سیکٹر سے نوجوانوں کو ذمہ داریاں سونپی جائیں۔اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ مرکزی بینک کی جانب سے برآمدی شعبوں اور مینو فیکچرننگ صنعتوں کوسہولت دینے کے اقدامات ستائش ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ برآمدی شعبوں کو درپیش دیرینہ مسائل بھی حل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ کینیا میں منعقدہ پہلی تجارتی کانفرنس کے انعقادسے پاکستانی اور افریقی تاجروں کو روابط بڑھانے کے مواقع میسر آئے ہیں اور انہیں چاہیے کہ باہمی دلچسپی کے شعبوں کی نشاندہی اور مربوط اقتصادی تعاون کیلئے مشترکہ تجاویز تیار کریں، نمائش میں اعلیٰ حکومتی شخصیات کی شرکت بھی دورس نتائج کی حامل ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نظرانداز مارکیٹوں تک رسائی کیلئے خصوصی اقدامات اٹھائے کیونکہ موجودہ حالات میں ہمیں برآمدات بڑھانے کیلئے کسی بھی طرح کا موقع ضائع نہیں کرنا چاہیے، پاکستانی مصنوعات کی موثر مارکیٹنگ کیلئے سوشل میڈیا کو ٹول کے طو رپر استعمال کیا جا سکتاہے، اس کیلئے حکومتی سر پرستی میں الگ شعبہ قائم کیا جائے اورتمام مصنوعات کے الگ الگ پویلین بنا ئے جائیں۔ محمد اسلم طاہر نے کہا کہ حکومت ہاتھ سے بنے ہوئے قالینوں کی مصنوعات کی صنعت کی بھی سرپرستی کرے اور اس کے ذریعے دیہی علاقوں میں انقلاب برپا کیا جا سکتاہے۔

مزید : علاقائی