سٹامپ پیپرز کی قیمت 250 روپے کرنا ناانصافی،ڈاکٹر عارف

  سٹامپ پیپرز کی قیمت 250 روپے کرنا ناانصافی،ڈاکٹر عارف

  



پشاور (سٹی رپورٹر)پشاور سمیت خیبر پختونخوا میں 100روپے کا اسٹامپ پیپر کی قیمت 250روپے ہونے کی وجہ سے صوبہ کی پشماندہ علاقوں کے عوام،طلبہ و طالبات کو حلفیہ بیان اور دیگر امور میں شدید مشکلات کا سامنا ہے جبکہ پہلے سے دہشت گردی سے متاثرہ صوبہ پر اسٹامپ پیپر کی قیمت میں اضافہ کسی بم سے کم نہیں لپروسی ٹی بی بلائنڈنس ریلیف ایسو سی ایشن پاکستان کے سرپرست اعلیٰ پروفیسرڈاکٹر عارف خا ن نے اس حوالے سے وزیر اعظم عمران خان،گورنر خیبر پختونخوا اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سے مطالبہ کیا کہ اسٹامپ پیپرکی قیمت 100روپے مقرر کی جائے اور اسٹامپ پیپر کی قیمت میں اضافہ کے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کی جائے۔انہوں نے کہا کہ پچاس روپے اسٹاپم پپر کے بندش کے بعد سو روپے کے اسٹامپ پیپر بھی عوام پر بوجھ تھا تاہم بعد ازاں اسکی قیمت بھی 150روپے تک پہنچ گئی جبکہ اب اسٹامپ پیپر کی قیمت 250روپے کر دی گئی ہے جو عوام پر اضافی بوجھ ثابت ہوگا اور اسکی وجہ سے عام لوگ،طلبہ ر طرح سے متاثر ہونگے جو حکومت کا ایک غلط اقدام ہے جسکی جتنی بھی مذم کی جائے کم ہے۔انہوں نے کہا کہ اسٹاپ پیپروں پر 16فیصد سیلز ٹیکس لگانے کے بعد اسکی قیمت 300روپے تک پہنچ جائے گی۔انہوں نے وزیر اعظم عمران خان اور صوبائی عہہدیداران سے مطالبہ کیا ہے کہ صوبہ میں 100روپے کا اسٹامپ پیپر بحال کیا جائے اور اسٹامپ پیپر کی قیمتوں کے اضافہ میں ملوث ذمہ داران کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر