غرب اردن میں سیاسی گرفتاریوں پر فلسطینی اتھارٹی کو تنقید کا سامنا

غرب اردن میں سیاسی گرفتاریوں پر فلسطینی اتھارٹی کو تنقید کا سامنا

  



رام اللہ(این این آئی)فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے مختلف علاقوں میں رام اللہ اتھارٹی کی ماتحت پولیس کے ہاتھوں سیاسی کارکنوں کی پکڑ دھکڑ پر انسانی حقوق کے اداروں کی طرف سے شدید تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق غرب اردن میں شہری آزادیوں پر نظر رکھنے والی کمیٹی کے وائس چیئرمین خلیل عساف نے کہا کہ عباس ملیشیا کے ہاتھوں سیاسی جماعتوں کے رہ نماؤں اور کارکنوں کی پکڑ دھکڑسنگین جرم ہے۔عساف نے مزید کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سازشی منصوبے کے اجراء کے بعد غرب اردن میں سیاسی کارکنوں کی گرفتاریوں کا کوئی جواز نہیں۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی کارکنوں کی گرفتاریوں سے فلسطینی اتھارٹی خود کو متنازع بنا رہی ہے۔ رام اللہ اتھارٹی کے اداروں کی طرف سیاسی کارکنوں کی گرفتاریاں بلا جواز اور ناقابل قبول ہیں۔

مزید : عالمی منظر