پیزا کے شوقین نوجوان نے 100 کلو وزن کم کر ڈالا، سب کے لیے مثال بن گیا

پیزا کے شوقین نوجوان نے 100 کلو وزن کم کر ڈالا، سب کے لیے مثال بن گیا
پیزا کے شوقین نوجوان نے 100 کلو وزن کم کر ڈالا، سب کے لیے مثال بن گیا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں موٹاپے کے شکار ایک نوجوان طالب علم نے بہت کم وقت میں اپنے وزن میں اتنی کمی کر لی کہ اس کے لیکچررز نے اسے پہچاننے سے ہی انکار کر دیا۔ دی مرر کے مطابق 20سالہ کایا ٹنکر نامی یہ نوجوان یونیورسٹی آف مانچسٹر کا طالب علم ہے جو موٹاپے کا شکار تھا اور اس کا وزن 190کلوگرام تک جا پہنچا تھا۔ پھر اس نے اپنی ماں کی ڈائٹ کی نقل کرنی شروع کر دی اور اپنے وزن میں حیران کن طور پر 100کلوگرام کمی کرنے میں کامیاب ہو گیا۔

وزن اس قدر کم کرنے کے بعد جب وہ یونیورسٹی گیا تو اس کے لیکچررز نے سمجھا کہ کوئی نیا طالب علم کلاس میں آیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق کایا کی 46سالہ والدہ مشعیل اونیل بھی موٹاپے کی شکار تھی اور اس نے کیمبرج ویٹ پلان (Cambridge Weight Plan) پر سائن اپ کیا اور ’1:1 ڈائٹ‘نامی ڈائٹ پلان پر عمل کرکے اپنا وزن کم کیا۔ اس ڈائٹ پلان پر عمل کرکے مشعیل نے پہلے ہفتے میں ہی ساڑھے پانچ کلوگرام وزن کم کر لیا۔ یہ دیکھ کر کایا نے بھی اپنی ماں کے ڈائٹ پلان پر عمل شروع کر دیا۔کایا کی والدہ نے اس ڈائٹ پلان سے اپنے وزن میں 38کلوگرام کمی کی۔ کایا کا کہنا تھا کہ ”مجھے لگتا تھا کہ موٹاپا کم کرنا ناممکن ہے لیکن جب میں نے دیکھا کہ میری والدہ نے ایک ہفتے میں ہی ساڑھے پانچ کلو وزن کم کر لیا ہے تو میں بہت متاثر ہوا اور ان کے ساتھ مل کر ان کے ڈائٹ پلان پر عمل کرنے لگا۔ اب میں پہلے سے کہیں زیادہ خوش، پراعتماد اور مطمئن ہوں۔مجھے ایسے لگتا ہے جیسے میں کوئی نیا شخص ہوں۔“

مزید : تعلیم و صحت