اپوزیشن نے اراکین پارلیمنٹ کی تنخواہوں میں اضافے کے بل کی مخالفت کردی

اپوزیشن نے اراکین پارلیمنٹ کی تنخواہوں میں اضافے کے بل کی مخالفت کردی
اپوزیشن نے اراکین پارلیمنٹ کی تنخواہوں میں اضافے کے بل کی مخالفت کردی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )سینیٹ میں اپوزیشن نے اراکین پارلیمنٹ کی تنخواہوں میں اضافے کے بل کی مخالفت کردی ۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق

سینیٹر نصیب اللہ بازئی سمیت دیگر 3 اراکین نے بل پیش کیا ۔اس موقع پر لیگی سینیٹر مشاہد اللہ نے کہا کہ کوئی طریقہ نہیں کہ جس کا داولگ جائے وہ تنخواہ بڑھالے جس کا داونہ لگے وہ روتا پھر ے، ہم نے آج تک تنخواہوں سے متعلق اصول بنائے ہی نہیں ہیں۔سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ پارلیمنٹ کا کام عوام کا مقدمہ لڑنا ہے اور پیپلز پارٹی کا منشور سب سے پہلے غریب طبقہ ہے۔ عوام تو گیس اور بجلی کا بل بھی نہیں دے پا رہے۔

سینیٹر فیصل جاوید نے تنخواہوں میں اضافے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ جب تک ایک مزدور کی آمدنی نہیں بڑھ جاتی اس وقت تک عوامی نمائندوں کو اپنی تنخواہ میں اضافہ نہیں کرانا چاہیے۔ وزیر اعظم عمران خان خود اس کی مثال بنے۔ جب تک ملک کی معیشت ٹھیک نہیں ہو جاتی اس بل کو روکنا چاہیے۔

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے بل کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ سیاست کو عبادت سمجھ کر کریں اس میں بھی ثواب ملتا ہے تنخواہیں نہیں۔ اگر وزیر اعظم عمران خان کے دو کھانے والوں کادو لاکھ میں گزارا نہیں ہو رہا تو ایک مزدور کا 17 ہزار میں کیسے گزارا ہو گا۔

مزید : قومی