ایل او سی پر بھارتی فوج کی بلا اشتعا ل فائرنگ، 2خواتین سمیت 4افراد زخمی 

ایل او سی پر بھارتی فوج کی بلا اشتعا ل فائرنگ، 2خواتین سمیت 4افراد زخمی 

  

        کوٹلی (این این آئی)لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج بلا اشتعال فائرنگ وگولہ باری سے ایک خاتون سمیت چار افراد زخمی ہو گئے۔لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج بلا اشتعال فائرنگ وگولہ باری سے جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنا رہی ہے، تتہ پانی اور جندروٹ سیکٹر میں بھارتی فوج نے اچانک گولہ باری شروع کر دی۔تتہ پانی سیکٹر کے علاقہ درو شیر خان اور تاہی میں ایک خاتون سمیت تین افراد زخمی جبکہ جندورٹ سیکٹرمیں گولہ باری سے خاتون سلیمہ ایوب زخمی ہوئی، گولہ باری سے ان علاقوں میں نظام زندگی مفلوج ہو کر رہ گیا، لوگ محفوظ پناہ گاہوں میں محصو ر ہوگئے۔دوسری جانب پاک فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کی جس سے دشمن کی توپیں خاموش ہو گئیں۔

ایل او سی

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)پاکستان نے ایل او سی پر سیز فائر کی خلاف ورزی پر بھارتی سینئر سفارتکار کو دفتر خارجہ طلب کرکے  شدید احتجاج ریکارڈ کرایا  اور  احتجاجی مراسلہ بھی تھمایا  ہے۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق  بھارتی افواج نے تتہ پانی سیکٹر پر دو فروری کو بلااشتعال فائرنگ کی۔بھارتی افواج کی اشتعال انگیزی سے چار شہری زخمی ہوئے۔ترجمان دفتر خارجہ  کے مطابق بھارت رواں برس 175 بار سیز فائر کی خلاف ورزیاں کر چکا ہے۔رواں برس بھارتی فائرنگ سے 8 افراد زخمی ہو چکے ہیں۔ بھارت کا معصوم شہریوں کو جان بوجھ کر نشانہ بنانا قابل مذمت ہے۔بھارتی فورسز مسلسل لائن آف کنٹرول، ورکنگ باونڈری پر شہری آبادی کو نشانہ بنا رہی ہیں۔بھارت کی پے در پے اشتعال انگیزیاں خطے میں امن و سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔بھارت ان حرکتوں سے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے دنیا کی توجہ نہیں ہٹا سکتا، ترجمان دفتر خارجہ  کے مطابق  پاکستان   کامطالبہ  ہے کہ    بھارت اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قراردادوں پر عمل درآمد یقینی بنائے،بھارت 2003ء  کے جنگ بندی انتظام کی پاسداری کرے۔ہندوستان کا نہتے شہریوں کو نشانہ بنانا عالمی قوانین، اقدار کے منافی ہے۔اقوام متحدہ فوجی مبصر مشن کو ایل او سی پر کام کرنے دیا جائے۔ 

ایل او سی

مزید :

صفحہ اول -