ایران نے بڑی صلاحیت حاصل کر لی، چند ماہ تک ایٹم بم بنالے گا: امریکی وزیر خارجہ 

ایران نے بڑی صلاحیت حاصل کر لی، چند ماہ تک ایٹم بم بنالے گا: امریکی وزیر ...

  

واشنگٹن (اظہر زمان، خصوصی رپورٹ) نئے امریکی وزیر خارجہ اینٹونی بلنکن نے انکشاف کیا ہے کہ انٹیلی جنس اطلاعات کے مطابق ایران آئندہ چند ماہ میں ایٹم بم بنا سکتا ہے۔ ”ایم ایس این بی سی“ ٹی وی کی خاتون رپورٹر اینڈریا مچل کے ساتھ ایک انٹرویو میں انہوں اینٹونی بلنکن نے کہا کہ ہمیں یہ ذہن میں رکھنا چاہئے کہ ایران کے پاس تابکاری کے ذریعے تقسیم اور فتشر ہونے والا مواد چند ماہ تک اتنا اکٹھا ہو جائے گا جس سے وہ ایٹم بم بنا سکتاہے۔ معاہدے سے نکلنے کے بعدایران نے پابندیوں سے آزاد ہوکر یہ صلاحیت حاصل کرلی ہے۔ اگر ایران کے ساتھ معاہدہ قائم رہتا تو اسے اس صلاحیت کے حصول کیلئے کئی برس لگ جاتے۔ ایران ایٹمی طاقت بننے کے دہانے پر پہنچ رہا ہے جو امریکی مفادات کے خلاف ہے۔ صدر بائیڈن بھی واضح کر چکے ہیں کہ اگر ایران معاہدے پر کاربند رہنے کا وعدہ کرے تو پھر ہم بھی معاہدہ بحال کرنے کو تیار ہیں اور اس سلسلے میں اپنے اتحادیوں سے مل کر آگے بڑھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شبہ نہیں کہ چین کسی دوسرے ملک کی نسبت امریکہ کے لئے سب سے زیادہ نمایاں چیلنج ہے لیکن یہ اتنا ہی پیچیدہ بھی ہے۔ ان تعلقات کے مخالفانہ پہلو ہیں کہیں اس کے ساتھ مقابلے کی فضاء ہے اور کہیں اس  کے ساتھ کچھ معاملات پرتعاون بھی جاری ہے۔ تاہم امریکہ چین کے ساتھ ایک کمزور کی بجائے مضبوط پوزیشن کے ذریعے معاملات کرنا چاہتا ہے۔ چین کے ساتھ امریکہ کو جو اہم چیلنج درپیش ہیں ان میں صوبہ سنکیانگ میں یغور مسلم اقلیت کے ساتھ ناروا سلوک اور ان کی نسل کشی شامل ہے۔ ہانگ کانگ میں غیر جمہوری اقدامات بھی ایک مسئلہ ہے امریکہ چاہتا ہے کہ ہماری فوجی موجودگی ایسی ہو جو چینی جارحیت کو روک سکے اور ہم اپنے عوام کی صلاحیتوں میں اضافہ کرنا چاہتے ہیں تاکہ وہ مارکیٹ میں چین کا پورا مقابلہ کرسکیں۔ اچھی خبر یہ ہے کہ ان سب معاملات میں ہم مکمل کنٹرول میں ہیں صرف ہمیں اپنی کمزوریوں کو ختم کرنا ہوگا تاکہ کوئی دوسرا ملک اس کا فائدہ نہ اٹھا سکے۔ وزیر خارجہ بلنکن نے کہا کہ امریکہ روس میں پرتشدد کریک ڈاؤن پر سخت پریشان ہے حکومت مخالف نوالنی کو حراست میں لینے کا اقدام روسی انتظامیہ کی ایک بڑی غلطی ہے۔ روس کے بارے میں ہم بیک وقت دو کام کر رہے ہیں ہم اس کے ساتھ واحد ایٹمی سمجھوتے ”سٹارٹ“ میں مزید پانچ سال کی توسیع میں کامیاب ہوگئے ہیں لیکن ڈیجیٹل شعبے میں روسی ہیکنگ کے خلاف بھی ہم نے زور دار طریقے سے احتجاج کیا ہے۔ روس سے اس الزام کی بھی وضاحت طلب کی گئی ہے کہ اس نے افغانستان میں امریکی فوجیوں کو قتل کرنے کے عوض معاوضہ ادا کیا ہے لیکن ان تمام شکایات کے باوجود ہم روس کیساتھ مفاہمت کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہیں۔

امریکی وزیر خارجہ

مزید :

صفحہ اول -